جی این این سوشل

تفریح

گلوکارہ ناہید اختر نے زندگی کی 66 بہاریں دیکھ لیں 

کراچی: پاکستان کی معروف گلوکارہ ناہید اختر آج 66 ویں سالگرہ منا رہی ہیں ۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

گلوکارہ ناہید اختر نے زندگی کی 66 بہاریں دیکھ لیں 
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

پاکستان کی معروف  اور خوبصورت گلوکارہ ناہید اختر 1954ء کو ملتان میں پیدا ہوئیں ۔ نوجوانی ہی میں اپنے شوق کے  باعث ریڈیو پاکستان ملتان سے گلوکاری کا آغاز کیا ۔ 1970ء میں پی ٹی وی کے پروگرام لوک تماشا  میں حصہ لیا ۔  وہاں پہ ان کا گایا ہوا گیت ’’مینوں سوڈا واٹر لے دے وے روز بالما کہندی‘‘ بہت مقبول ہوا۔

ثقافتی پروگرام کے ذریعے اپنی مدھر اور خوبصورت آواز سے لوگوں کو متاثر کرنے والی پاکستان کی لیجنڈ گلوکارہ ناہید اختر نے موسیقی کی دنیا میں خوب نام کمایا۔  فلم ’’ننھا فرشتہ‘‘ کے نغمے’’دل دیوانہ دل‘‘ نے ناہید اختر کی شہرت میں مزید اضافہ کیا لیکن فلم ’’شمع‘‘ کے گیت ’’کسی مہرباں نے آکے میری زندگی سجادی‘‘ نے ان کی مقبولیت میں بے پناہ اضافہ کردیا۔

1991 میں ناہید اختر نے معروف ڈرامہ نگار آصف علی پوتا سے شادی کے بعد گلوکاری کو خیرباد کہہ دیا۔ ان کی خوبصورت آواز سے بالی ووڈ والے بھی متاثر ہوئے اور انہوں نے ناہید اختر کے گائے ہوئے کئی گیتوں کو اپنی فلموں میں کاپی کیا ۔

ناہید اختر کے مقبول ترین نغموں، غزلوں اور ملی نغموں کی ایک طویل فہرست ہے ، ان کے چند گیت اور غزلیں  بے پناہ مقبول ہوئیں جن میں تو میرے ساتھ ساتھ رہے تو جدا نہ ہو ، یہ دنیا رہے نہ رہے میرے ہمدم کہانی محبت کی زندہ رہے گی ، آئے موسم رنگیلے، کسی مہرباں نے آکے میری زندگی سجا دی ، تیری الفت میں صنم،شب غم مجھ سے مل کر ایسے روئی ، چھاپ تلک سب چھین لی رے موسے نینا ملائی کے،شامل ہیں ۔

موسیقی کی دنیا میں گراں قدر خدمات انجام دینے کے لیے حکومت پاکستان کی جانب سے انہیں 2007 میں صدارتی ایوارڈ برائے حسن کارکردگی ملا اور 1974، 1975 اور 1985 میں نگار فلم ایوارڈ سے بھی نوازا جا چکا ہے۔

موسم

ملک بھر میں شدید گرمی، آئندہ 24 گھنٹوں میں بارش کا کوئی امکان نہیں

جنوبی پنجاب اور ملک کے دیگر حصے بھی گرمی کی لپیٹ میں رہیں گے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ملک بھر میں شدید گرمی، آئندہ 24 گھنٹوں میں بارش کا کوئی امکان نہیں

 محکمہ موسمیات نے آئندہ چوبیس گھنٹوں میں بھی موسم شدید گرم رہنے کا امکان ظاہر کر دیا۔

ملک بھر میں دیگر علاقے شدید گرمی کی لپیٹ میں ہیں، محکمہ موسمیات کے مطابق سب سے زیادہ درجہ حرارت سبی میں 49 سینٹی گریڈ ، لاہور 45، اسلام آباد 44، پشاور 43، کراچی کا درجہ حرارت 37 ڈگری سینٹی گریڈ تک ہو سکتا ہے۔

جنوبی پنجاب اور ملک کے دیگر حصے بھی گرمی کی لپیٹ میں رہیں گے۔

دوسری جانب کراچی میں جنوب مغرب سے 20 سے 25 کلومیٹرفی گھنٹہ کی رفتار سے ہوائیں چل رہی ہیں ، بعض مقامات پر بوندا باندی ہو سکتی ہے۔

مغربی ہواؤں کا سلسلہ 18 جون کو ملک کے مغربی علاقوں میں داخل ہونے کا امکان ہے جس کے دوران گلگت بلتستان اور کشمیر میں گرج چمک کے ساتھ اور کہیں کہیں موسلا دھار بارش کا امکان ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

ہماری 100 دن کی کارکردگی کی ماضی میں مثال نہیں ملتی، رانا تنویر حسین

زیراعظم شہبازشریف اور انکی ٹیم کی محنت سے 2025 پاکستان کی بہتری، خوشحالی اور ترقی کا سال ہوگا، وفاقی وزیر

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ہماری 100 دن کی کارکردگی کی ماضی میں مثال نہیں ملتی، رانا تنویر حسین

شیخوپورہ: وزیر صنعت و پیداوار اور نیشنل فوڈ سیکیورٹی رانا تنویر حسین نے کہا ہے کہ وزیراعظم شہبازشریف اور انکی ٹیم کی محنت سے 2025 پاکستان کی بہتری، خوشحالی اور ترقی کا سال ہوگا۔ہماری حکومت کی 100 دن کی کارکردگی کی ماضی میں مثال نہیں ملتی۔

ہر شعبے میں حکومت نے ریکارڈ کام کئے ہیں ،قوم سے وعدہ ہے کہ آئی ایم ایف کا یہ آخری پروگرام ہوگا ۔وہ شیخوپورہ کی تحصیل مریدکے میں نماز عید الضحٰی کی ادائیگی کے بعد میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔

رانا تنویر حسین کا کہنا تھا کہ ملک معاشی طور مستحکم ہورہا ہے بہت جلد ترقی کی منازل طے کرے گا۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

نیتن یاہو نے 6 رکنی جنگی کابینہ تحلیل کر دی

نیتن یاہو ایک چھوٹے گروپ کے ساتھ غزہ جنگ کے بارے میں مشاورت کریں گے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

نیتن یاہو نے 6 رکنی  جنگی کابینہ تحلیل کر دی

اسرائیل کے وزیر اعظم نیتن یاہو نے جنگی کابینہ تحلیل کر دی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق اسرائیلی وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو نے 6 رکنی جنگی کابینہ کو تحلیل کر دیا ہے، مرکزپسند سابق جنرل بینی گانٹرز کے استعفے کے بعد اس اقدام کی توقع کی جا رہی تھی۔

رپورٹس کے مطابق اسرائیلی رہنما نے اس فیصلے کا اعلان گزشتہ شام سیاسی سکیورٹی کابینہ کے اجلاس میں کیا تھا، اب نتن یاہو کے انتہائی دائیں بازو کے اتحادی شراکت دار ایک نئی جنگی کابینہ کے قیام کے لیے زور دے رہے ہیں۔نیتن یاہو اب جنگی کابینہ میں رہنے والے وزیر دفاع یوو گیلنٹ اور اسٹریٹجک امور کے وزیر رون ڈرمر سمیت وزرا کے ایک چھوٹے گروپ سے غزہ جنگ کے بارے میں مشاورت کیا کریں گے۔

نیتن یاہو کو وزیر خزانہ بیزلیل سموٹرچ اور قومی سلامتی کے وزیر اتمار بن گویر جیسے قوم پرست مذہبی شراکت داروں کی جانب سے جنگی کابینہ میں شمولیت کے مطالبے کا سامنا تھا، یہ ایسا اقدام ہے جس سے امریکا سمیت بین الاقوامی شراکت داروں کے ساتھ تناؤ مزید بڑھ جائے گا۔

مذکورہ جنگی کابینہ گزشتہ برس اکتوبر میں جنگ کے آغاز پر تشکیل دی گئی تھی، جب بینی گانٹز نیتن یاہو کے قومی اتحاد کی حکومت میں شامل ہوئے، کابینہ میں گانٹز کے ساتھی گاڈی آئزن کوٹ اور مذہبی جماعت شاس کے سربراہ آریہ دیری کو بطور مبصر شامل کیا گیا تھا۔ بینی گانٹز اور آئزن کوٹ دونوں نے گزشتہ ہفتے نیتن یاہو حکومت کو اس اعتراض کے ساتھ چھوڑ دیا، کہ وزیر اعظم غزہ جنگ کے لیے کوئی حکمت عملی بنانے میں ناکام ہو گئے ہیں، ان کا مطالبہ تھا کہ امریکی اور اتحادیوں کے مطالبات کے باوجود غزہ پر بمباری جاری رکھی جائے، تاہم نیتن یاہو نے مبینہ طور پر انھیں مسترد کر دیا۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll