جی این این سوشل

علاقائی

پنجاب میں گندم خریداری مہم کا آغاز 13 اپریل سے شروع

کاشت کاروں سے گندم 3 ہزار 900 روپے فی من  کی مقررہ قیمت پر خریدی جائے گی، ترجمان محکمہ خوارک پنجاب

پر شائع ہوا

کی طرف سے

پنجاب میں گندم خریداری مہم کا آغاز 13 اپریل سے شروع
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

پنجاب میں گندم خریداری مہم کا آغاز ہفتہ 13 اپریل سے ہوگا۔

ترجمان محکمہ خوراک کے مطابق کاشت کاروں سے گندم 3 ہزار 900 روپے فی من  کی مقررہ قیمت پر خریدی جائے گی جبکہ کاشتکار باردانہ ایپ کے ذریعے باردانہ کے حصول کی درخواست دے سکیں گے۔

ترجمان محکمہ خوراک پنجاب کا کہنا ہے کہ پی آئی ٹی بی کی باردانہ ایپ پر 13 سے 17 اپریل تک باردانہ کے حصول کے لیے درخواستیں موصول ہوں گی، باردانہ کا اجراء 19 اپریل 2024 سے ہوگا اور پیر 22 اپریل سے گندم کی خریداری شروع ہوگی، جس کے لیے ضلعی سطح پر گندم کی خریداری کے لیے انتظامات مکمل کر لیے گئے ہیں۔

ترجمان محکمہ خوراک کے مطابق پی آئی ٹی بی اور پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی کی تصدیق کے بعد کاشتکاروں کو تصدیقی میسج کیا جائے گا۔

ترجمان نے بتایا کہ صوبے بھر میں 393 گندم خریداری مراکز قائم کیے ہیں اور گندم کی قیمت کے علاوہ ہر کاشتکار کو 30 روپے فی 100 کلوگرام ڈلیوری چارجز بھی ادا کیے جائیں گے۔

ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ چھوٹے کسان کے تحفظ کے لیے باردانہ حصول کی اہلیت 6 ایکڑ تک رکھی گئی ہے، فلورملز، پرائیویٹ سیکٹر اور سیڈ کمپنیوں کو بھی مقررہ نرخ پر خریداری کی اجازت دی گئی ہے۔

ترجمان محکمہ خوراک کے مطابق گندم خریداری مہم کے دوران شکایات کے ازالے کے لیے کنٹرول روم اور ٹال فری نمبر 080013505 پر اطلاع دیں۔

علاقائی

کار سرکارمداخلت پر جمشید دستی کے خلاف مقدمہ درج

جمشید دستی نے پرائس کنٹرول مجسٹریٹ کو ہراساں کرنے اور کار سرکارمیں مداخلت کی ہے، ایف آئی آر کا متن

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

کار سرکارمداخلت پر جمشید دستی کے خلاف مقدمہ درج

پرائس کنٹرول مجسٹریٹ کو ہراساں کرنے اور کار سرکار میں مداخلت پر جمشید دستی کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا۔

پولیس ذرائع کے مطابق جمشید دستی نے ساتھیوں کے ہمراہ گراں فروشوں پر عائد جرمانوں کی رسیدیں پھاڑ دیں،جس پر پولیس نے مقدمہ درج کر لیا۔

درج کی گئی ایف آر کے متن کے مطابق جمشید دستی نے پرائس کنٹرول مجسٹریٹ کو ہراساں کرنے اور کار سرکارمیں مداخلت کی ہے۔انہوں نے لوگوں کو افسران کے خلاف احتجاج پر اُکسایا ہے۔

ذرائع کے مطابق جمشید دستی کی تاحال گرفتاری عمل میں نہیں لائی گئی۔

پڑھنا جاری رکھیں

صحت

راولپنڈ ی بینظیر بھٹو اسپتال میں کانگو وائرس کے دو مریض انتقال کر گئے

ملک بھر میں  ایک بار پھر خطرناک وائرس کا خطرہ منڈلا رہا ہے جس کا نام ہے ’کانگو‘ دراصل کریمین کانگو ہیموریجک بخار (سی سی ایچ ایف) نے پاکستان میں تشویش پیدا کر دی ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

راولپنڈ ی بینظیر بھٹو اسپتال  میں کانگو وائرس  کے دو مریض انتقال کر گئے

راولپنڈی :  ملک بھر میں  ایک بار پھر خطرناک وائرس کا خطرہ منڈلا رہا ہے جس کا نام ہے ’کانگو‘ دراصل کریمین کانگو ہیموریجک بخار (سی سی ایچ ایف) نے پاکستان میں تشویش پیدا کر دی ہے۔

ملک کے نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ہیلتھ نے وائرس سے دفاع کے لیے شہریوں کو کچھ مشورے بھی جاری کیے ہیں۔ گزشتہ سال بھی کانگو وائرس سے ہونے والے بخار نے پاکستان کو پریشان کیا تھا، اور اس سال بھی کچھ ایسے ہی حالات پیدا ہوتے ہوئے دکھائی دے رہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق  راولپنڈی کے  بینظیر بھٹو  اسپتال میں کانگو وائرس سے دو اموات سامنے آئی ہیں  اسپتال ذرائع کے مطابق تین مریضوں کواسپتال لایا گیا جن میں سے دو مریض دم توڑ گئے ہیں جبکہ ایک مریض زیر علاج ہے ۔ 

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

حکومت نے کھاد کارخانوں کیلئے گیس پر سبسڈی ختم کرنے کی منظوری دیدی

کھاد کارخانوں کو سبسڈی دینے سے کسانوں کو کوئی فائدہ نہیں پہنچ رہا، حکومت

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

حکومت نے کھاد کارخانوں کیلئے گیس پر سبسڈی ختم کرنے کی منظوری دیدی

وفاقی حکومت نے کھاد کے کارخانوں کے لیے گیس پر سبسڈی ختم کرنے کی منظوری دے دی۔

ذرائع کے مطابق وفاقی کابینہ نے اتفاق رائے سے کھاد فیکٹریوں کوملنے والی سبسڈی مکمل طور پر ختم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

کھاد کے کارخانوں کو اس وقت 217 روپے فی ایم ایم بی ٹی یو سبسڈی مل رہی ہے ، کارخانوں کو 1597 روپے فی ایم ایم بی ٹی یو قیمت پر گیس سپلائی کی جارہی ہے۔

حکومت کا کہنا ہے کہ کھاد کارخانوں کو سبسڈی دینے سے کسانوں کو کوئی فائدہ نہیں پہنچ رہا۔

کابینہ کے فیصلے پر عملدرآمد کے بعد کارخانوں کو فراہم کی جانے والی گیس کی قیمت 1814 روپے فی ایم ایم بی ٹی یو ہو جائے گی ، حکومت کسانوں کو برائے راست سبسڈی فراہم کرنے کا ارداہ رکھتی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll