جی این این سوشل

صحت

 خسرے سے جاں بحق ہونے والے بچوں کی تعداد 7ہوگئی

وزیراعلی پنجاب کے نوٹس کے بعد صوبائی وزیر صحت خواجہ عمران نذیر نے پتوکی کا ہنگامی دورہ

پر شائع ہوا

کی طرف سے

 خسرے سے جاں بحق ہونے والے بچوں کی تعداد 7ہوگئی
 خسرے سے جاں بحق ہونے والے بچوں کی تعداد 7ہوگئی

پتوکی میں خسرے سے جاں بحق ہونے والے بچوں کی تعداد 7ہوگئی۔

وزیراعلی پنجاب کے نوٹس کے بعد صوبائی وزیر صحت خواجہ عمران نذیر نے پتوکی کا ہنگامی دورہ کیا اور خسرہ آئیسولیشن وارڈ میں زیر علاج بچوں کی خیریت دریافت کی۔

تفصیلات کے مطابق پتوکی کے نواحی علاقے ٹھٹہ کمیانہ، دولو گرو اور دیگر میں خسرے سے جاں بحق ہونے والے بچوں کی تعداد سات ہوگئی۔

صوبائی وزیر خواجہ عمران نذیر نے مریض سے ویکسینیشن سے متعلق پوچھا اور انہیں ویکسینیشن نا کروانے پر اپنے بچوں کی صحت کا دھیان رکھنے اور ویکسینیشن کروانے سے متعلق آگاہی دی۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خواجہ عمران نذیر کا کہنا تھا کہ ابھی تک جاں بحق ہونے والے بچوں میں خسرے کی علامات رپورٹ نہیں ہوئیں اور تین دن تک انکی رپورٹ سامنے آجائی گی اور اگر کوئی ذمہ دار پایا گیا تو انکے خلاف محکمانہ کارروائی ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ متاثرہ علاقہ میں اسپیشل ٹیمیں تعینات کردی گئیں ہیں جو گھر گھر جاکر معائنہ کررہی ہیں۔وزیراعلی مریم نواز صحت کی سہولیات لوگوں کے گھروں میں پہنچا رہی ہیں اس کے علاوہ پتوکی میں 16 بچے زیر علاج ہیں اور انہیں صحت کی سہولیات فراہم کی جارہی ہیں، اور انکا علاج فری ہورہا ہے۔

علاقائی

سات سالہ پریا کماری کی بازیابی کیلئے ہندو کمیونٹی کا دھرنا

دھرنے میں ہندو کمیونٹی کے ساتھ سول سوسائٹی اور قومی اسمبلی کے رکن کھیل داس کوہستانی نے بھی شرکت کی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

سات سالہ پریا کماری کی بازیابی کیلئے  ہندو کمیونٹی کا دھرنا

کراچی میں تین تلوار پر تین سال قبل سکھر سے مبینہ طور پر لاپتہ ہونے والی سات سالہ پریا کماری کی بازیابی کیلئے ہندو کمیونٹی نے دھرنا دے دیا۔

دھرنے میں ہندو کمیونٹی کے ساتھ سول سوسائٹی اور قومی اسمبلی کے رکن کھیل داس کوہستانی نے بھی شرکت کی۔

ایم این اے کھیل داس کوہستانی نے کہا کہ تین سال کے عرصے سے پولیس پریا کو بازیاب نہیں کراسکی، پریا کماری کے والدین پر کیا گزر رہی ہے ،اس کا درد کون جانے۔

مظاہرین کی تین تلوار کے اطراف سڑکیں بند کرنے کی کوشش کے بعد پولیس کی اضافی نفری تین تلوار پر طلب کی گئی تھی۔

ڈی آئی جی ساؤتھ کا کہنا تھا کہ کئی افراد کو حراست میں لینے کے بعد سب کو فوری رہا کر دیا گیا تھا۔

وزیر داخلہ سندھ ضیاء الحسن لنجار کا کہنا ہے کہ میڈیا پرسن پر تشدد کی مذمت کرتے ہیں، اختیارات سے تجاوز کرنے کی کسی کو اجازت نہیں ہے، انصاف کے تقاضے پورے کیے جائیں گے ، تشدد میں جو پولیس اہلکار ملوث ہیں ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

ابو ظہبی پورٹس کا کراچی بندرگاہ پر25کروڑ ڈالر کی سرمایہ کاری کا اعلان

ابو ظہبی پورٹس پاکستان کے وفد نے وزیراعظم شہباز شریف سے ملاقات کی ، وفد کی قیادت چیف ایگزیکٹو آفیسر خریم عزیز خان نے کی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ابو ظہبی پورٹس کا کراچی بندرگاہ پر25کروڑ ڈالر کی سرمایہ کاری کا اعلان

ابو ظہبی پورٹس پاکستان اگلے 10 سال میں کراچی بندر گاہ پر 25 کروڑ ڈالر کی سرمایہ کاری کرے گا۔

ابو ظہبی پورٹس پاکستان کے وفد نے وزیراعظم شہباز شریف سے ملاقات کی ۔ وفد کی قیادت چیف ایگزیکٹو آفیسر خریم عزیز خان نے کی۔

ملاقات کے دوران انھیں بتایاگیا کہ تمام ضروری سہولیات سے لیس جدید کثیر المقاصد ٹرمینل آئندہ دو سال میں مکمل کرلیاجائے گا اس منصوبے پر تیرہ کروڑ ڈالر کی سرمایہ کاری کی جائے گی۔

ٹرمینل منصوبے میں ایسس کنٹرول کی تعمیر ، خود کار دروازے ، دوسومیٹرز تک برتھ کی توسیع ، کرین ریل ٹریک اور دیگر ڈھانچہ جاتی کام شامل ہے۔

ٹرمینل پر نئے ڈھانچے کی تعمیر سے ایک لاکھ بیس ہزار ٹن تک کے مال برادر بحری جہاز لنگر انداز ہوسکیں گے۔

وزیراعظم نے کہا ابو ظہبیپورٹس کے ساتھ معاہدے کا مقصد شفافیت ، فعالیت اور بندرگاہ کی کارکردگی کوبڑھانا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ بندرگاہ پر اشیا اور کنٹینرز کی نقل وحمل کو ڈیجیٹل ٹیکنالوجی اور جدید مشینری سے بہتر بنایاجائے گا۔

شہبازشریف نے کہا کہ بندرگاہوں پر کنٹینر کے نظام کو بہتر بنا کر کلیئرنس کے لیے درکاروقت کو کم کیاجاسکتا ہے ۔

وزیراعظم نے منصوبے کو فعال کرنے اور ٹرمینل سے اشیا کواٹھانے کے لیے ریلوے حکام کو مال برادر بوگیوں اور ضروری سازوسامان کی فراہمی کی بھی ہدایت کی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

کالعدم ٹی ٹی پی کے سرغنہ کیخلاف قانونی کارروائی کا فیصلہ

متعلقہ تحقیقاتی اداروں نے نور ولی اور غٹ حاجی کی خفیہ آڈیو لیک کا فارنزک کروانے کا فیصلہ کیا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

کالعدم ٹی ٹی پی کے سرغنہ کیخلاف قانونی کارروائی کا فیصلہ

حکومت نے  کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے سرغنہ نور ولی محسود کے خلاف سخت قانونی چارہ جوئی کا فیصلہ کر لیا گیا۔

ذرائع کے مطابق متعلقہ تحقیقاتی اداروں نے نور ولی اور غٹ حاجی کی خفیہ آڈیو لیک کا فارنزک کروانے کا فیصلہ کیا ہے اور فارنزک رپورٹ کے بعد نور ولی اور غٹ حاجی کے خلاف ملک کے اندر اور باہر سخت قانونی چارہ جوئی کی جائے گی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ نور ولی کی افغانستان میں موجودگی اور پاکستان میں براہِ راست دہشتگردی کروانے پر افغان حکومت سے احتجاج اور دہشتگردوں کو پاکستان کے خلاف مسلسل دہشتگردی اور سنگین جرائم کرنے پر پاکستان کے حوالے کرنے کا مطالبہ بھی کیا جائے گا۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز افغان میں روپوش ٹی ٹی پی کے سربراہ نور ولی محسود کی ایک مبینہ آڈیو لیک سامنے آئی تھی جس میں وہ پاکستان میں دہشتگردی کی ہدایات دے رہا تھا۔ مبینہ آڈیو میں احمد حسین کو ہسپتالوں ، سرکاری املاک اور سکولوں کو دھماکے سے اڑانے کی ہدایات دے رہا تھا۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll