جی این این سوشل

ٹیکنالوجی

چین کا چینگ ای 6 خلائی مشن کامیابی کے ساتھ چاند کےجنوبی قطب پر اتر گیا

چینی خلائی مشن چاند کی سطح کے نمونے حاصل کرکے انہیں اپنے 53 روزہ مشن میں زمین پر لائے گا

پر شائع ہوا

کی طرف سے

چین کا چینگ ای 6 خلائی مشن  کامیابی کے ساتھ چاند کےجنوبی قطب پر اتر گیا
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

چین کا چینگ ای 6 خلائی مشن اتوار کو کامیابی کے ساتھ چاند کےجنوبی قطب پر اتر گیا، اسے چین کے خلائی تحقیق کے پروگرام کے لیے ایک بڑی کامیابی قرار دیا جارہا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق چین کے خلائی تحقیق کے قومی ادارے کے حوالے سے بتایا کہ چینگ ای 6 چاند کے قطب جنوبی پر واقع ایک بڑے گڑھے ایٹکن بسین میں اترا ، یہ چاند کا وہ علاقہ ہے جس بارے بہت کم معلومات موجود ہیں۔

چینی خلائی مشن یہاں سے چاند کی سطح کے نمونے حاصل کرکے انہیں اپنے 53 روزہ مشن میں زمین پر لائے گا۔ چینگ ای 6 کے خلائی مشن کا آغاز گزشتہ ماہ کی تین تاریخ کو ہوا تھا۔

چینی حکام کے مطابق یہ مشن دو دن میں چاند کی سطح سے مٹی اور چٹانوں کے نمونے حاصل کرنے اور لینڈنگ زون میں دیگر تجربات کرنے کی کوشش کرے گا۔اس کے لئے مشن کے ساتھ سطح کے نیچے سےنمونے جمع کرنے کے لیے ایک ڈرل اورروبوٹک بازو نصب ہے۔

اس مواد پر تحقیق اس بات پر روشنی ڈالنے میں مدد کرے گی کہ چاند کیسے بنا تھا۔واضح رہے کہ پاکستان کا سیٹلائٹ آئی کیوب کیو بھی اسی مشن کے ساتھ روانہ کیا گیا تھا جو اب کامیابی کے ساتھ چاند کے گرد مدار میں گردش کر رہا ہے۔

 

علاقائی

پنجاب حکومت کی لاہور میں ٹرام سروس شروع کرنے کی منظوری

ٹرام سروس لبرٹی، مین مارکیٹ، منی مارکیٹ اور ہال روڈ کے علاقوں میں چلائی جائے گی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پنجاب حکومت کی لاہور میں ٹرام سروس شروع کرنے کی منظوری

لاہور: پنجاب حکومت نے لاہور شہر میں ٹرام سروس شروع کرنے کی منظوری دیدی ہے۔ اس منصوبے کا مقصد شہر کی خوبصورتی کو بڑھانا اور شہریوں کو ایک جدید اور آرام دہ ٹرانسپورٹ سسٹم فراہم کرنا ہے۔

وزیر اعلیٰ پنجاب مریم نواز کی زیر صدارت لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی (ایل ڈی اے) کے ہیڈ کوارٹرز میں ہونے والے اجلاس میں اس منصوبے کی منظوری دی گئی۔ اجلاس میں سینئر صوبائی وزیر مریم اورنگزیب، معاون خصوصی برائے سیاسی امور ذیشان ملک، چیف سیکرٹری، پرنسپل سیکرٹری، اور دیگر حکام نے شرکت کی۔

ذرائع کے مطابق  ٹرام سروس لبرٹی، مین مارکیٹ، منی مارکیٹ اور ہال روڈ کے علاقوں میں چلائی جائے گی۔ ٹرام کل 11 کلومیٹر کا فاصلہ طے کرے گی اور اس کے راستے پر ہر ایک سے ڈیڑھ کلومیٹر کے فاصلے پر ایک سٹاپ موجود ہوگا۔

یہ منصوبہ چین اور فن لینڈ کی طرز پر بنایا جائے گا۔ ٹرام سروس نہ صرف شہر کی خوبصورتی کو بڑھانے میں مدد کرے گی بلکہ شہریوں کو ایک سستا اور آسان ٹرانسپورٹ سسٹم بھی فراہم کرے گی۔

ٹرام سروس کے لیے ایم ایم عالم روڈ کو تبدیل کیا جائے گا اور سڑک پر ٹائلیں بھی استعمال کی جائیں گی۔

پڑھنا جاری رکھیں

علاقائی

این ٹی ڈی سی کا 12 گھنٹے کی طویل لوڈشیڈنگ پر وضاحتی بیان

حیسکو ریجن میں 12گھنٹے تک کی لوڈشیڈنگ کی وجہ صرف این ٹی ڈی سی کو قرار دینا درست نہیں:ترجمان 

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

این ٹی ڈی سی کا 12 گھنٹے کی طویل لوڈشیڈنگ پر وضاحتی بیان

لاہور:نیشنل ٹرانسمیشن اینڈ ڈسپیچ کمپنی (این ٹی ڈی سی) کے ترجمان نے 22 جولائی کو حیدرآباد الیکٹرک سپلائی کمپنی (حیسکو) کے علاقوں میں بجلی کی حالیہ طویل بندش کے بارے میں وضاحت کی ہے۔

ترجمان این ٹی ڈی سی کے مطابق حیسکو ریجن میں اضافی لوڈ مینجمنٹ کے اقدامات نیپرا گرڈ کوڈ 2023 کے مطابق کیے گئے۔ یہ اقدامات 21 جولائی بروز ہفتہ اور 22 جولائی بروز اتوار کی درمیانی شب پیدا ہونے والی ہنگامی صورتحال کے پیش نظر کیے گئے۔

ترجمان این ٹی ڈی سی نے زور دے کر کہا کہ 12 گھنٹے تک کی لوڈ شیڈنگ کوصرف این ٹی ڈی سی سے منسوب کرنے کا دعویٰ مبالغہ آرائی پر مبنی تھا اور یہ صورتحال کی درست وضاحت نہیں تھی۔

ترجمان نے کہا کہ ان اقدامات کی بنیادی وجہ گھارو اور جھمپیر ونڈ کلسٹرز میں واقع 36 ونڈ فارمز سے بجلی کی پیداوار میں نمایاں کمی تھی۔ یہ ونڈ فارمز 1,845 میگاواٹ کی مشترکہ پیداواری استعداد کے ساتھ این ٹی ڈی سی کے 500 کے وی جامشورو گرڈ سٹیشن کو بجلی فراہم کرتے ہیں۔ ہوا کی غیر معمولی طور پر کم رفتار کے نتیجے میں ونڈ فارمز سے بجلی کی پیداوار میں نمایاں کمی واقع ہوئی جس کے نتیجے میں جامشورو گرڈ سٹیشن کے ٹرانسفارمرز پر بہت زیادہ بوجھ پڑا۔

اہم آلات کی حفاظت کی کوشش میں این ٹی ڈی سی نے اضافی لوڈ شیڈنگ کیلئے حیسکو حکام کے ساتھ رابطہ کیا تاہم اتوار کی صبح تک ہوا کی رفتار معمول پر آ گئی جس کے بعد بجلی کی پیداوار بڑھنے پر حیسکو کے علاقوںمیں اضافی لوڈ شیڈنگ کی ضرورت نہیں رہی۔

یہاں یہ واضح کرنا ضروری ہے کہ لوڈ شیڈنگ کا اصل دورانیہ 12 گھنٹے کے مقابلے میں نمایاں طور پر کم تھا۔ترجمان این ٹی ڈی سی کے مطابق 4 گھنٹے تک تقریباً 75 میگاواٹ اور 6 گھنٹے تک 142 میگاواٹ کا شارٹ فال رہا جس کے نتیجے میں حیسکو کی جانب سے مختلف 11 کے وی فیڈرز پر اوسطاً ایک گھنٹہ لوڈشیڈنگ کی گئی۔

پڑھنا جاری رکھیں

تجارت

پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں تیزی، 100 انڈیکس 79 ہزار کی سطح پر واپس

بینچ مارک کے ایس ای-100 انڈیکس میں 917 پوائنٹس کا اضافہ ہوا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں تیزی، 100 انڈیکس 79 ہزار کی سطح پر واپس

کراچی: پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں مسلسل دو روز کی شدید مندی کے بعد آج زبردست تیزی کا رجحان دیکھا گیا اور بینچ مارک کے ایس ای-100 انڈیکس میں 917 پوائنٹس کا اضافہ ہوا۔

پی ایس ایکس ویب سائٹ کے مطابق آج کے ایس ای-100 انڈیکس 917 پوائنٹس یا 1.17 فیصد بڑھ کر 79 ہزار 456 پر پہنچ گیا۔ کاروبار کے آغاز میں ہی انڈیکس 344 پوائنٹس بڑھ کر 79 ہزار 340 پر چلا گیا تھا۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز بینچ مارک کے ایس ای-100 انڈیکس 1578 پوائنٹس کی غیر معمولی کمی کے بعد 78 ہزار 538 پر بند ہوا تھا، جو 28 مئی 2024 کے بعد کی سب سے کم سطح تھی۔

آج کی تیزی میں حبیب بینک، اور یونی لیور پاکستان شامل ہیں، ان کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں بالترتیب4.97 فیصد، اور 4.95 فیصد اضافہ ہوا۔

مارکیٹ کے ماہرین کا کہنا ہے کہ آج کی تیزی کی وجہ گزشتہ روز کی شدید کمی کے بعد منافع خوری اور بین الاقوامی مارکیٹوں میں مثبت رجحان ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ آنے والے دنوں میں مارکیٹ میں یہ مثبت رجحان برقرار رہے گا۔

آج کے کاروبار میں 444 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اتار چڑھاؤ آیا۔ ان میں سے 194 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ، 234 کی قیمتوں میں کمی، اور 16 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی۔

مجموعی طور پر 47 کروڑ 47 لاکھ شیئرز 25 ارب 23 کروڑ روپے میں ٹریڈ ہوئے۔ مارکیٹ کی کیپٹلائزیشن 10 ہزار 834 ارب روپے سے بڑھ کر 10 ہزار 881 ارب روپے ہو گئی۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll