جی این این سوشل

صحت

غذائی قلت کا شکار آٹھ ہزار سے زائد بچوں کا علاج کیا جا چکا ہے ،ڈبلیو ایچ او

صحت مراکز پر حملوں ، نقل و حمل پر پابندی اور صحت کی خدمات کے حصول کی راہ میں رکاوٹ کے باعث مغربی کنارے میں بھی صحت بحران بڑھ رہاہے

پر شائع ہوا

کی طرف سے

غذائی قلت کا شکار آٹھ ہزار سے زائد بچوں کا علاج کیا جا چکا ہے ،ڈبلیو ایچ او
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

عالمی ادارہ صحت نے کہا ہے کہ غزہ پراسرائیلی جارحیت کے باعث غزہ کی پٹی میں شدید غذائی قلت کا شکار 5 سال سے کم عمر کے8000 سے زائد بچوں کا علاج کیا جاچکا ہے۔

ڈبلیو ایچ او کے سربراہ ٹیڈروس ایڈہانوم نے جنیوا میں ایک پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ ان میں سے 28 بچے جاں بحق ہوچکے ہیں جبکہ غزہ کی آبادی کا ایک بڑا حصہ شدید بھوک اور قحط کا سامنا کر رہا ہے۔

انہوں نے کہاصحت مراکز پر حملوں ، نقل و حمل پر پابندی اور صحت کی خدمات کے حصول کی راہ میں رکاوٹ کے باعث مغربی کنارے میں بھی صحت بحران بڑھ رہاہے۔

پاکستان

توشہ خانہ کیس، عمران خان اور بشریٰ بی بی کا گرفتاری کے خلاف عدالت سے رجوع

بانی پی ٹی آئی اور بشریٰ بی بی کو سیاسی انتقام کے لیے جعلی مقدمات میں بغیر جواز گرفتار کیا گیا، موقف

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

توشہ خانہ کیس، عمران خان اور بشریٰ بی بی کا  گرفتاری کے خلاف عدالت سے رجوع

بانی پی ٹی آئی عمران خان اور بشریٰ بی بی نے توشہ خانہ کیس میں گرفتاری کے خلاف اسلام آباد ہائیکورٹ سے رجوع کرلیا۔ بیرسٹر سلمان صفدر اور خالد یوسف چوہدری کے ذریعے درخواست دائر کی گئی ہے۔

درخواست میں موقف اپنایا گیا کہ بانی پی ٹی آئی اور بشریٰ بی بی کو سیاسی انتقام کے لیے جعلی مقدمات میں بغیر جواز گرفتار کیا گیا، سیاسی مخالف وفاقی اور پنجاب حکومت بانی پی ٹی آئی اور بشریٰ بی بی کو زیر حراست رکھنا چاہتے ہیں۔

دونوں ملزمان کو طلبی کے نوٹسز کے خلاف درخواستیں زیر سماعت ہونے کے دوران گرفتار کیا گیا، اسلام آباد ہائیکورٹ میں درخواست زیر سماعت ہونے کے دوران گرفتاری بدنیتی کا ثبوت ہے۔

درخواست گزاروں کے مطابق سیاسی مخالفین نیب کو مسلسل سیاسی انتقام کے لیے استعمال کر رہے ہیں، اعلیٰ عدالتیں اپنے فیصلوں میں زور دے چکیں کہ محض مقدمہ درج ہونے پر گرفتار نہیں کیا جا سکتا۔

استدعا کی گئی کہ گرفتاری غیر قانونی ہے رہا کرنے کے احکامات کیے جائیں اور آئندہ کسی بھی مقدمے میں گرفتاری ہائیکورٹ کے احکامات سے مشروط کی جائے۔
 

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

بانی چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کی قید کے دوران ملاقاتوں کی تفصیلات سامنے آگئیں

عمران خان نے ستمبر 2023ء سے جولائی 2024ء تک کل 1635 افراد سے ملاقاتیں کیں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

بانی چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کی قید کے دوران ملاقاتوں کی تفصیلات سامنے آگئیں

بانی چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کی قید کے دوران ملاقاتوں کی تفصیلات سامنے آگئیں، عمران خان نے ستمبر 2023ء سے جولائی 2024ء تک کل 1635 افراد سے ملاقاتیں کیں۔

اڈیالہ جیل سے جاری اعداد و شمار کے مطابق بانی پی ٹی آئی سے کمرہ ملاقات میں 454 ملاقاتیں ہوئیں، ملاقاتوں میں 88 وکلاء، 223 سیاسی دوست، 119 فیملی اور 14 اسپیشل ڈاکٹر شامل ہیں۔

جیل ذرائع کے مطابق اڈیالہ میں قائم عدالت میں بانی پی ٹی آئی سے 1181 ملاقاتیں ہوئیں جن میں وکلاء سے 591، فیملی سے 273 اور 317 میڈیا نمائندوں سے ملاقاتیں ہوئیں۔

رپورٹس کے مطابق بانی چیئرمین نے اپنے بیٹوں سے واٹس ایپ پر 13 بار بات کی، ان ملاقاتوں کا سلسلہ ابھی بھی جاری ہے۔
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
  
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 

جیل ذرائع کے مطابق بانی پی ٹی آئی کی واٹس ایپ کے ذریعے بیٹوں سے 13 کالز کرائی گئیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

ڈیموکریٹس کی اکثریت بائیڈن کو انتخابی دوڑ سے باہر دیکھنا چاہتی ہے، سروے

نیا پول بائیڈن کے اس دعوے کی سختی سے تردید کرتا ہے کہ ٹرمپ سے مباحثے کے بعد ڈیموکریٹس کی اکثریت اب بھی ان کی حمایت کرتی ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ڈیموکریٹس کی اکثریت بائیڈن کو انتخابی دوڑ سے باہر دیکھنا چاہتی ہے، سروے

لگ بھگ دو تہائی ڈیموکریٹس نے سروے میں کہ دیا ہے کہ امریکی صدر جو بائیڈن کو صدارتی دوڑ سے دستبردار ہو جانا چاہیے اور ان کی پارٹی کو ایک مختلف امیدوار کھڑا کرنے دینا چاہیے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق یہ نیا پول بائیڈن کے اس دعوے کی سختی سے تردید کرتا ہے کہ ٹرمپ سے مباحثے کے بعد ڈیموکریٹس کی اکثریت اب بھی ان کی حمایت کرتی ہے۔ یاد رہے اس مباحثے کے بعد کچھ بڑے ناموں نے بائیڈن کی حمایت چھوڑ دی ہے۔

اے پی این او آر سی سنٹر فار پبلک افیئر ریسرچ کے ایک نئے سروے کے مطابق 10 میں سے صرف تین ڈیموکریٹس کو بہت زیادہ یقین ہے کہ بائیڈن کے پاس دفتر میں مؤثر طریقے سے خدمت کرنے کی ذہنی صلاحیت موجود ہے۔ یہ فروری میں کئے گئے ایک سروے میں 40 فیصد کی حایت سے تھوڑی کم حمایت ہے۔

یہ نتائج ان چیلنجوں کی طرف اشارہ کرتے ہیں جن کا سامنا 81 سالہ صدر کو ہے کیونکہ وہ اپنی پارٹی کے اندر سے دوڑ چھوڑنے کے مطالبات کو خاموش کرنے کی کوشش کر رہے اور ڈیموکریٹس کو یہ باور کرانے کی بھی کوشش کر رہے ہیں کہ وہ ڈونلڈ ٹرمپ کو شکست دینے کے لیے بہترین امیدوار ہیں۔

یہ رائے شماری اصل میں ٹرمپ پر ہفتہ 13 جولائی کو پنسلوانیا میں قاتلانہ حملے سے پہلے کی گئی تھی۔ یہ واضح نہیں ہے کہ آیا ٹرمپ پر فائرنگ کے واقعہ نے بائیڈن کے بارے میں لوگوں کے خیالات کو متاثر کیا ہے یا نہیں۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll