جی این این سوشل

کھیل

سابق کرکٹرشاہد آفریدی کا صحافی عمران ریاض کے الزامات پر درعمل

ایسے گیلے تیتروں اور مشیروں کی وجہ سے آج سیاسی رہنما جیل میں ہیں، شاہد آفریدی

پر شائع ہوا

کی طرف سے

سابق کرکٹرشاہد آفریدی  کا صحافی عمران ریاض کے الزامات پر درعمل
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان شاہد آفریدی نے سوشل میڈیا پر صحافی عمران ریاض کی جانب سے اپنے اوپر لگائے گئے الزامات کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ ایسے گیلے تیتروں اور مشیروں کی وجہ سے آج سیاسی رہنما جیل میں ہیں۔ اگر ان کے ارد گرد بہتر لوگ ہوتے تو آج صورتحال مختلف ہوتی۔

سوشل میڈیا پلیٹ فارم ایکس پر اپنے ٹویٹ میں سابق کرکٹر کا کہنا تھا کہ موجودہ حالات میں یوٹیوب پر مواد بنانا مشکل ہوگا لیکن اس کا یہ مطلب نہیں کہ جھوٹ کو سچ اور سچ کو جھوٹ کی طرح پیش کیا جائے۔

آفریدی نے مزید کہا کہ یہ جھوٹے پروپیگنڈے پر میرا آخری جواب ہے کیونکہ آپ کو یوٹیوب پر جھوٹ بول کر اور میرا نام بار بار استعمال کرکے ڈالر کمانے پڑتے ہیں جب کہ میں اپنی فاؤنڈیشن کی طرف سے کیے جانے والے فلاحی کاموں کی دیکھ بھال کرتا ہوں۔ میرے پاس اتنا وقت نہیں ہے کہ ہر ٹرول کا جواب دیتا رہوں۔

واضح رہے کہ سینئر صحافی عمران ریاض نے اپنے ولاگ میں کہا تھا کہ شاہین شاہ آفریدی دنیا کے بہترین باؤلر ہیں اور وہ اپنی بیٹنگ میں بھی بہتری لا رہے ہیں۔ لیکن جب تک آپ ٹیم کو شاہد آفریدی کی سیاست سے پاک نہیں کریں گے ٹیم اس وقت تک آگے نہیں جائے گی، جیسے ہی یہ ٹیم کے قریب آئیں انہیں اٹھا کر دور پھینک دیں، شاہد آفریدی اگر شاہین کے آس پاس رہیں گے اور اس کے اندر سیاست کو داخل کریں گے تو اس کا کھیل بھی تباہ کر دیں گے، شاہد آفریدی کی سیاست سے اس ٹیم کو جتنی جلدی بچایا جائے اتنا بہتر ہے۔

صحافی نے مزید کہا کہ یہ کھلاڑی ان (شاہد آفریدی) سے ڈرتے ہیں کہ ان کی لابی بہت مضبوط ہے اور ان کے بہت سے رابطے ہیں لیکن میں اس سے نہیں ڈرتا۔ میں صاف کہتا ہوں کہ شاہد کی گندی سیاست شاہین کی کرکٹ کو ڈبو دے گی۔

پاکستان

پی ٹی آئی کارکن صنم جاویدمقدمے سے بری ہونے کے بعد دوبارہ گرفتار

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ اسلام آباد نے صنم جاوید کو ایف آئی اےکے مقدمے سے بری کیا تھا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پی ٹی آئی کارکن  صنم جاویدمقدمے سے بری  ہونے کے بعد دوبارہ گرفتار

پاکستان تحریک انصاف کی کارکن صنم جاوید کو رہائی کے بعد دوبارہ گرفتار کرلیا گیا۔

صنم جاوید کو اسلام آباد پولیس نے گرفتار کر لیا، وکیل میاں اشفاق نے بھی صنم جاوید کی گرفتاری کی تصدیق کر دی۔

وکیل میاں اشفاق کا کہنا تھا کہ ہم نے بغیر مذاحمت صنم جاوید کو پولیس کے حوالے کر دیا۔

واضح رہے کہ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ اسلام آباد نے آج ہی پاکستان تحریک انصاف کی کارکن صنم جاوید کو وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) کے مقدمے سے بری کیا تھا۔

ڈیوٹی مجسٹریٹ ملک عمران نے صنم جاوید کے ریمانڈ پر محفوظ فیصلہ سنا دیا اور عدالت نے صنم جاوید کے وکلا کی مقدمے سے بریت کی استدعا منظور کی اور صنم جاوید کوبری کرنے کا حکم دیا، صنم جاوید رہائی کے بعد وکلا کے ہمراہ عدالت سے روانہ ہوگئیں۔

یاد رہے کہ ایف آئی اے نے صنم جاوید کو گوجرانوالا سینٹرل جیل سے گرفتار کیا تھا۔گزشتہ روز گرفتاری کے بعد  ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ نے صنم جاوید کو جوڈیشل مجسٹریٹ کی عدالت میں پیش کیا تھا۔

دوسری جانب ڈسٹرکٹ اینڈ سیشنز کورٹ اسلام آباد نے پی ٹی آئی کارکن صنم جاوید کو ایف آئی اے مقدمے سے ڈسچارج کرنے کا  تحریری فیصلہ جاری کردیا۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پی ٹی آئی کے ایم این اے صاحبزادہ محمد امیر سلطان مبینہ طور پر اغواء

عدالتی فیصلے کے بعد ہمارے ایم این اے غیر محفوظ ہیں، جنرل سیکرٹری پی ٹی آئی لاہور

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پی ٹی آئی  کے ایم این اے صاحبزادہ محمد امیر سلطان  مبینہ طور پر اغواء

پاکستان تحریک انصاف کے ایم این اے بیرسٹر صاحبزادہ محمد امیر سلطان کو رات گئے لاہور میں ان کے گھر سے مبینہ طور پر اغوا کر لیا گیا۔

جنرل سیکرٹری پی ٹی آئی لاہور حافظ ذیشان رشید کی جانب سے جاری بیان میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ این اے 110 جھنگ سے ایم این اے صاحبزادہ امیر سلطان کو نامعلوم افراد نے اغوا کر لیا۔

ذیشان رشید نے بتایا کہ صاحبزادہ امیر سلطان کو سرور روڈ پر ان کے گھر سے رات گئے اغوا کیا گیا، عدالتی فیصلے کے بعد ہمارے ایم این اے غیر محفوظ ہیں۔

دوسری جانب ایس پی کینٹ جھنگ اویس شفیق کا کہنا ہے ایم این اے صاحبزاہ امیر سلطان کو گرفتار نہیں کیا، رکن قومی اسمبلی کے اغوا سے متعلق بھی کوئی اطلاع نہیں ہے۔ لواحقین درخواست دینگے تو کارروائی کا آغاز کرینگے ۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

حماس کا بڑا فیصلہ، غزہ جنگ بندی مذاکرات سے دستبردار ہونے کا اعلان

اسرائیل کی جانب سے غزہ میں قتل عام کرنے اور مذاکرات میں اس کے غیر سنجیدہ رویے کی وجہ سے جنگ بندی کے مذاکرات سے دستبردار ہوئے ہیں، حماس

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

حماس کا بڑا فیصلہ، غزہ جنگ بندی مذاکرات سے دستبردار ہونے کا اعلان

حماس کا بڑا فیصلہ، غزہ جنگ بندی مذاکرات سے دستبردار ہونے کا اعلان کر دیا

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق حماس کے ایک سینیئر اہلکار نے کہا ہے وہ اسرائیل کی جانب سے غزہ میں قتل عام کرنے اور مذاکرات میں اس کے غیر سنجیدہ رویے کی وجہ سے غزہ تنازع پر ہونے والی جنگ بندی کے مذاکرات سے دستبردار ہو گیا ہے۔

سینئر عہدیدار کے مطابق حماس کے سیاسی رہنما اسمعیل ہنیہ نے بین الاقوامی ثالثوں قطر اور مصر کو جنگ بندی کے حوالے سے جاری مذاکرات سے دستبردار ہونے کے بارے میں بتادیا جسے مئی میں امریکی صدر جو بائیڈن نے پیش کیا تھا۔

اسمعیل ہنیہ نے کہا کہ حماس قابض (اسرائیل) کی جانب سے سنجیدگی کے فقدان، تاخیر اور رکاوٹ کی مسلسل پالیسی اور غیر مسلح شہریوں کے خلاف جاری قتل عام کی وجہ سے مذاکرات کو روک دے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ حماس نے ایک معاہدے تک پہنچنے اور جارحیت کو ختم کرنے کے لیے بڑی لچک دکھائی ہے اور جب قابض حکومت جنگ بندی کے معاہدے اور قیدیوں کے تبادلے کے معاہدے تک پہنچنے میں سنجیدگی کا مظاہرہ کرے گی تو وہ مذاکرات دوبارہ شروع کرنے کے لیے تیار ہے۔

اسمعیل ہنیہ نے ہفتے کو ایک بیان میں کہا کہ انہوں نے ثالثوں اور دیگر ممالک کو فون کیا ہے کہ وہ اسرائیل پر حملے روکنے کے لیے دباؤ ڈالیں۔

دوسری جانب اسرائیل نے کہا کہ محمد دیف، جسے وہ 7 اکتوبر کے حملوں کے ’ماسٹر مائنڈ‘ میں سے ایک سمجھتا ہے، جنوبی غزہ میں المواسی کیمپ پر کیے گئے حملوں کا ہدف تھا جہاں دوسرے اضلاع سے ہزاروں کی تعداد میں بے گھر فلسطینی جمع ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll