جی این این سوشل

جرم

فیصل آباد :10 سالہ لاپتہ بچی کی لاش پڑوسی کی چھت سے برآمد

فیصل آباد : گزشتہ روز لاپتہ ہونے والی 10 سالہ بچی ایمان فاطمہ کی لاش پڑوسی کی چھت سے برآمد ہوئی ہے، پولیس نے واقعے کی تحقیقات شروع کردیں۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

فیصل آباد :10 سالہ لاپتہ بچی کی لاش پڑوسی کی چھت سے برآمد
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

تفصیلات کے مطابق فیصل آباد کی تحصیل سمندری کے علاقے سے گزشتہ روز لاپتہ ہونے والی 10 سالہ بچی کی لاش مل گئی، لواحقین نے مظاہرہ کرکے قاتلوں کی گرفتاری کا مطالبہ کیا ہے۔

10 سالہ ایمان فاطمہ کے قتل کیخلاف مقتولہ کے لواحقین اور عزیز و اقارب نے سمندری مین چوک پر ٹائرجلا کر احتجاجی مظاہرہ کیا۔

مشتعل مظاہرین نے پولیس کے خلاف شدید نعرے بازی کی، اور ایمان فاطمہ کے قاتلوں کو گرفتار کرکے سخت سے سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ 10 سالہ ایمان فاطمہ گزشتہ روز گھر سے باہر ایک دکان پر گئی اور لاپتہ ہوگئی، تلاش کرنے پر 24 گھنٹے بعد تشدد زدہ لاش ہمسائے کی چھت سے ملی۔

مقتولہ کے ورثاء کا کہنا ہے کہ ہمسائے نے دکان پر چاول لینے کیلئے بھیجا، دوکاندار سے پوچھا تو اس کہا کہ بچی واپس چلی گئی تھی، کافی دیر تک تلاش کے بعد جب نہیں ملی تو پھر رپورٹ درج کروائی،  بچی کے لاپتہ ہونے کا مقدمہ مقامی تھانہ میں درج ہونے کے بعد اس کی تلاش جاری تھی کہ گھر کے پڑوسی کی چھت سے اس کی لاش مل گئی۔

پولیس نے لاش تحویل میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لیے اسپتال منتقل کردی جبکہ 4 مشکوک افراد کو بھی حراست میں لے لیا گیا۔ پولیس کے مطابق بچی کو جنسی زیادتی کے بعد گلا دبا کر قتل کیا گیا۔

علاقائی

 نامعلوم موٹرسائیکل سواروں کی نہتے شہریوں پر فائرنگ، بلوچستان پولیس کا ملازم جاں بحق جبکہ درجن سے زائد شہری شدید زخمی

 نامعلوم موٹرسائیکل سواروں کی نہتے شہریوں پر سیدھی فائرنگ سے بلوچستان پولیس کا ملازم جاں بحق جبکہ درجن سے زائد شہری شدید زخمی ہو گئے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

 نامعلوم موٹرسائیکل سواروں کی نہتے شہریوں پر فائرنگ، بلوچستان پولیس کا ملازم جاں بحق جبکہ درجن سے زائد شہری شدید زخمی

تفصیل کے مطابق گزشتہ رات سات بجے کے قریب تونسہ کی نواحی بستی سوکڑ میں دس موٹرسائیکل سوار بیس کے قریب شرپسندوں کی سیدھی فائرنگ سے بستی سوکڑ کا رہائشی نوجوان محمد حارث ملغانی جو کہ بلوچستان پولیس میں ملازم تھا جاں بحق ہو گیا جبکہ درجن سے زائد افراد شدید زخمی ہو گئے،جن میں تین کی حالت نازک بتائی جا رہی ہے۔

ذرائع کے مطابق دو یوم قبل شاہ صدر دین کے کچھ  شرپسندوں نے سابقہ رنجش کی بنا پر بستی سوکڑ میں فوجی ریاض کے بیٹے پر فائرنگ کی تھی جو معجزانہ طور پر فائرنگ سے محفوظ رہا تھا فائرنگ کی آواز سن کر اہل علاقہ نے ان کا گھیراؤ کر کے ایک شخص کو اپنے قابو میں کر لیا تھا جبکہ اس کے دیگر ساتھی موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے تھے مقامی لوگوں کے مطابق تحویل میں لیے گئے شخص کو اہل علاقہ نے شدید زدوکوب کیا تھا بعد ازاں اسکو مقامی پولیس کے حوالے کر دیا تھا.

اطلاعات کے مطابق اپنے ساتھی کو زدوکوب کرنے اور پولیس کی تحویل میں دینے کے ردعمل میں شاہ صدردین سے 20 کے قریب شرپسند کلاشنکوفوں سے مسلح ہو کر دوبارہ بستی سوکڑ میں آئے اور شہریوں پر سیدھی فائرنگ شروع کر دی جس کے نتیجے میں پانچ بہنوں کا اکلوتا بھائی محمد حارث جاں بحق جبکہ محمد عاطف محمد معاذ سمیع اللہ مٹھا گانمن چلتن والا گلشیر فوجی پاک آرمی اور دیگر آٹھ شہری شدید زخمی ہو گئے جنہیں فوری طور پر تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال تونسہ میں شفٹ کر دیا گیا

ہسپتال ذرائع نے زخمیوں میں سے تین کی حالت نازک بتائی ہے۔اس افسوسناک واقعے پر بستی سوکڑ کے تمام شہری گھروں سے باہر نکل آئے اور فائرنگ کی تحقیقات کیلیے آئی ہوئی پولیس وین پر حملہ آور ہو گئے پولیس ملازمان نے بھاگ کر اپنی جان بچائی۔

اطلاعات کے مطابق مظاہرین نے شدید پتھراؤ کر کے پولیس وین کو مکمل طور پر تباہ کر دیا اور پھر تمام مظاہرین نے بھائی موڑ کے مقام پر بین الصوبائی شاہراہ انڈس ہائی وے کو مکمل بلاک کر دیا کراچی پشاور ہائی وے بلاک ہونے سے تونسہ کے مقام پر ہزاروں گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں۔

آخری اطلاعات کے مطابق اہلیان سوکڑ اور پولیس کے مابین مذاکرات مکمل طور پر تعطل کا شکار ہیں۔پولیس ذرائع کے مطابق ڈی پی او ڈیرہ غازیخان کی ہدایت پر پورے سرکل تونسہ کی نفری کو ہر قسم کے حالات سے نمٹنے کیلیے الرٹ کر دیا گیا ہے اور شرپسندوں کی گرفتاری کیلیے خصوصی ٹیمیں بھی تشکیل دے دی گئی ہیں ۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

ملک کے جو حالات ہیں کوئی بھی اس سے بری الذمہ نہیں:شاہد خاقان عباسی

اسلام آباد: پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنماءاور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہملک کے جو حالات ہیں کوئی بھی اس سے بری الذمہ نہیں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ملک کے جو حالات ہیں کوئی بھی اس سے بری الذمہ نہیں:شاہد خاقان عباسی

اسلام آباد: پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنماءاور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ ملکی نظام کی بہتری کیلئے ہم سب کو اکٹھا ہونا پڑے گا اور عدلیہ سمیت تمام اداروں کو ساتھ بیٹھنا ہو گا، اگر اسٹیبلشمنٹ آئین کے دائرے میں رہے تو سر آنکھوں پر، اگر آئینی دائرے سے باہر نکلتی ہے تو مسائل پیدا ہوتے ہیں۔ 

تفصیلات کے مطابق نیوز کانفرنس کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ سیاستدانوں کو چاہیے کہ سیاست کو ایک طرف رکھ کر ملک کیلئے سوچیں کیونکہ ملکی نظام کی بہتری کیلئے ہم سب کو اکٹھا ہونا پڑے گا، لوگوں نے اپنے مسائل ہمیں بتائے اور انہیں حل کرنے کے لیے اصرار کیا، اگر ہم نظام کو آئین کے اندر نہیں لائیں گے تو مسائل حل نہیں ہوں گے، معیشت اور پاکستان کو بچانے کیلئے سب کو ایک پیج پر آنا ہو گا۔ 

انہوں نے کہا کہ سیاسی نظام کو ٹھیک کرنے کی ضرورت ہے، عدلیہ سمیت تمام اداروں کو ساتھ بیٹھنا ہو گا، ملک کے جو حالات ہیں کوئی بھی اس سے بری الذمہ نہیں ، سیاسی جماعتوں کی ذمہ داری ہے عوام کے مسائل کا حل تلاش کریں، آج ذاتی مفادات چھوڑ کر ملکی مفاد کیلئے سوچنا ہو گا، معیشت اور عوام کیلئے ہم سب کو ساتھ بیٹھنا ہو گا، ملکی معاملات کو حل کرنے کیلئے منصوبہ بندی کرنا ہو گی۔ 

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ اے پی ایس سانحہ کے بعد ملک دہشت گردی کے خلاف متحد ہوگیا تھا، آج پارلیمان مفلوج ہے ، عوامی مسائل پر بات نہیں ہوتی، ملکی مشکلات پر وہ تکلیف نظر نہیں آتی جو سیاسی نظام میں ہوتی ہے، انقلاب کی بات نہیں کر رہے ہیں، ملک کے مسائل کا حل ڈھونڈنا ہے، اگر اسٹیبلشمنٹ آئین کے دائر ے میں رہے تو ہماری سر آنکھوں پر، اگر اسٹیبلشمنٹ آئین کے دائرے سے نکلتی ہے تو مسائل پیدا ہوتے ہیں۔ 

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

وزیر اعظم کے لاہور میں دفاتر کی سیکورٹی کیلئے کروڑوں روپے خرچ کرنے کا فیصلہ

لاہور :وزیراعظم میاں شہباز شریف کے کیمپ  دفاتر کی سیکیورٹی فول پروف بنانے کیلئے ماڈل ٹاون اور ڈیفنس میں 12کروڑ 30لاکھ سے سیکیورٹی آلات نصب کئے جائیں گے ۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

وزیر اعظم کے لاہور میں دفاتر کی سیکورٹی کیلئے کروڑوں روپے خرچ کرنے کا فیصلہ

پولیس حکام کے مطابق96ایچ اور ڈی ایچ اے فیز ون میں موجود کیمپ افسز میں کیمرے ،سامان چیک کرنے والی مشین۔ہائیڈرالک بیرئیر۔۔واک تھرو گیٹس سمیت دیگر سیکیورٹی الات  لگائے جائیں گے  ، جس کیلئے 64سیکیورٹی کیمرے ،2ہائیڈرالک بیرئیر ،3گاڑیوں کوسکین کرنے والے سسٹم۔سوسیکیورٹی لائٹس خریدی جائیں گی۔ 

 حکام کا کہنا ہے کہ  وزیر اعظم کی سیکیورٹی پر معمورملازمین کےلئے 10کیبن،1فائبرروف سنائپرپوسٹ بھی  خریدی جائے گی، کنٹرول روم کےلئے2 کینٹینرمکمل سامان کے ساتھ خریدےجائیں گے۔  اگ بجھانے کیلئے :پچاس  سلنڈر۔2فائرالارم سسٹم  بھی نصب کیئے جائیں گے ۔

وزیر اعظم کی سیکورٹی کیلئے  4ہزار میٹرریزر وائر۔۔10میٹل ڈیٹکٹر۔۔4ڈراپ ڈاون بیرئیر   2ایکسپولوسو ڈیٹیکر ،2واک تھرو گیٹس 2سنائپرز کےلئے پوسٹس خرید جائیں گی۔

 پولیس حکام کے مطابق آئی جی پنجاب کو  سیکورٹی الات کی خریداری  اور بروقت تنصیب کے احکامات  جاری کیئے گئے ہیں ۔

واضح رہے کہ  حکومت نے سیکورٹی آلات کی  خریداری کےلئے 23جنوری کو12کروڑ30لاکھ کے فنڈز کی منظوری دے دی تھی ۔ 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll