جی این این سوشل

تجارت

ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر میں اضافے کا رجحان برقرار

کاروباری ہفتے کے پہلے روز ڈالر کی قدر میں مزید کمی ہوگئی

پر شائع ہوا

کی طرف سے

ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر میں اضافے کا رجحان برقرار
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

کراچی: امریکی ڈالر کے مقابلے میں پاکستانی روپیہ کی قدر میں اضافے کا رجحان آج بھی برقرار ہے۔

کرنسی ڈیلرز کے مطابق انٹربینک میں کاروباری ہفتے کے پہلے روز ڈالر کی قدر میں مزید 40 پیسے کی کمی ہوگئی جس سے امریکی ڈالر 286 روپے 10 پیسے کا ہوگیا۔

یاد رہے کہ پاکستانی کرنسی کے مقابلے میں امریکی ڈالر کی قیمت میں کئی ہفتوں سے اضافے کا رجحان رہا تاہم گزشتہ کاروباری ہفتے کے اختتام پر مجموعی طور پر ڈالر کی قدر میں معمولی کمی ریکارڈ کی گئی۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق کاروباری ہفتے کے آخری روز کرنسی مارکیٹ میں کاروبار کے دوران ڈالر کی قیمت میں 53 پیسے کی کمی دیکھی گئی اور ایک ڈالر کی قیمت 286.50 روپے کی سطح پر آگئی۔ اسٹیٹ بین کے مطابق گزشتہ ہفتے کے آخری روز انٹربینک میں ڈالر 287 روپے تین پیسے پر بند ہوئی تھی۔

پاکستان

لگتا ہے بانی چیئرمین پی ٹی آئی کو مزید وقت جیل میں گزارنا پڑے گا، رؤف حسن

توشہ خانہ کے اوپر ایک اور مقدمہ بنانے کی تیاریاں ہو رہی ہیں، سیکرٹری اطلاعات پی ٹی آئی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

لگتا ہے بانی  چیئرمین پی ٹی آئی کو مزید وقت جیل میں گزارنا پڑے گا، رؤف حسن

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی ) کے سیکرٹری اطلاعات رؤف حسن نے کہا ہے کہ لگتا ہے سابق چیئرمین پی ٹی آئی کو مزید وقت جیل میں گزارنا پڑے گا،توشہ خانہ کے اوپر ایک اور مقدمہ بنانے کی تیاریاں ہو رہی ہیں۔

رؤف حسن نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بانی پی ٹی آئی کیخلاف توشہ خانہ پر چوتھا مقدمہ بنانے کی کی کوشش کی جا رہی ہے، سابق چیئرمین پی ٹی آئی پر بے بنیاد مقدمات بنائے گئے ہیں اور پوری کوشش کی جا رہی ہے کہ مقدمات کے فیصلے نہ ہوسکیں۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں سابق چیئرمین پی ٹی آئی کے کیسز میں کہیں انصاف نظر نہیں آرہا ، ایسا لگتا ہے سابق انہیں مزید وقت جیل میں گزارنا پڑے گا جبکہ شاہ محمود قریشی کیخلاف بھی 8،9مقدمے بنائے گئے ہیں۔

توشہ خانہ کیس میں آج جو تماشہ ہوا وہ سب نے دیکھ لیا ، سابق چیئرمین پی ٹی آئی کیخلاف عدت اور سائفر کے مقدمے ختم ہوچکے ہیں، سائفر کا مقدمہ بھی کرش کرچکا اور توشہ خانہ کیس میں سزا معطل ہوچکی ہے۔

رہنما پی ٹی آئی نے کہا کہ سابق چیئرمین پی ٹی آئی کو جیل سے باہر آنا چاہئے تھا، ہمیں خوف ہے سابق چیئرمین پی ٹی آئی اور مقدمات بنائے جائیں گے،جب تک یہ ہوتا رہے گا نہ انصاف ملے گا اور نہ آزادی ملےگی۔

انہوں نے کہا کہ حمود الرحمان کمیشن رپورٹ میں فوج کیخلاف کوئی بات نہیں کی گئی، رپورٹ میں فوج کے بہادری سےلڑنے کا ذکر ہے، ہماری فوج سے کوئی لڑائی نہیں ہے ۔

رؤف حسن کا مزید کہنا تھا کہ القادر کیس میں ثبوت نہیں مل رہا تو ملک ریاض پر دباؤ ڈالا جارہا ہے، جب تک آئین اور قانون بحال نہیں ہوگا یہ لڑائی ہم لڑتے رہیں گے۔ ابھی بھی سابق چیئرمین پی ٹی آئی پر 200اور مقدمات چل رہے ہیں۔ پچھلے 2سال سے پاکستان میں آئین و قانون کا فقدان نظر آرہا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ شاعر احمد فرہاد کا کیس بھی آپ کے سامنے ہے اور اتنے دن حبس بے جا میں رکھنے کے بعد پہلے آزاد کشمیر باغ کے کسی پولیس اسٹیشن میں اس کو لایا گیا اور پھر مظفرآباد میں کوئی کیس درج ہے تو وہاں بھیجا گیا، حقائق پر مبنی ایک نظم لکھنے کی پاداش میں ایک انسان کے پچھلے ایک یا سوا مہینے میں کیا ہوا۔

ترجمان نے کہا کہ تحریک انصاف کے بیانیے کے حوالے سے غلط فہمیاں پیدا کیا جا رہی ہیں اور ہمیں معلوم ہے کہ اس کے پیچھے کونسی طاقتیں کارفرما ہیں، 1971 کے سانحے کے حوالے سے غلط باتیں پھیلائی جا رہی ہیں، حمودالرحمٰن کمیشن میں کہیں بھی فوج کے بارے کوئی غلط بات نہیں کی گئی۔

پڑھنا جاری رکھیں

تجارت

ملک میں معاشی استحکام آ رہا ہے ، وزارت خزانہ

وزارت خزانہ نے اپنی ماہانہ اقتصادی جائزہ رپورٹ میں کہا ہے کہ مجموعی ترقیاتی پیداوار بحالی کی جانب گامزن ہے جبکہ مہنگائی میں بتدریج کمی آ رہی ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ملک میں معاشی استحکام  آ رہا ہے ، وزارت خزانہ

وزارت خزانہ نے کہا ہے کہ ملک میں معاشی استحکام کی علامتیں زیادہ واضح ہو رہی ہیں۔

وزارت خزانہ نے اپنی ماہانہ اقتصادی جائزہ رپورٹ میں کہا ہے کہ مجموعی ترقیاتی پیداوار بحالی کی جانب گامزن ہے جبکہ مہنگائی میں بتدریج کمی آ رہی ہے۔مثبت بنیادی توازن سے ظاہر ہوتا ہے کہ مالیاتی استحکام کیلئے کوششیں کی جا رہی ہیں اور حسابات جاریہ میں مثبت اضافے سے بیرونی شعبے میں استحکام نمایاں ہے۔

رپورٹ کے مطابق رواں مالی سال میں زرعی شعبہ اقتصادی ترقی میں بنیادی کردار ادا کر رہا ہے جس میں 6.25 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ رواں مالی سال کی دوسری سہ ماہی کے دوران بڑے پیمانے پر مصنوعات کی تیاری کی شرح مثبت رہنے کا امکان ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

فرانس کی قانون ساز اسمبلی میں فلسطینی پرچم لہرانے سے رکن کی رکنیت معطل

جھنڈا تھامے فرانسیسی رکن اسمبلی نے بآواز بلند فلسطینیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا اور اسرائیل کی مذمت کی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

فرانس کی قانون ساز اسمبلی میں فلسطینی پرچم لہرانے سے رکن کی رکنیت معطل

فرانس کی قانون ساز اسمبلی میں فلسطین کی حمایت کرنے اور پرچم لہرانے پر بائیں بازو سے تعلق رکھنے والے پارلیمنٹیرین کی رکنیت 2 ہفتوں کے لیے معطل کر دی گئی۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق فرانس کی پارلیمنٹ میں فلسطینی ریاست کو تسلیم کرنے کے معاملے پر گرما گرم بحث ہوئی جس کے دوران بنیاد پرست بائیں بازو کی جماعت ‘فرانس انبوڈ’ کے رکن اسمبلی سیبسٹین ڈیلوگو اپنی نشست پر کھڑے ہوئے اور فلسطین کا جھنڈا لہرادیا۔

جھنڈا تھامے فرانسیسی رکن اسمبلی نے بآواز بلند فلسطینیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا اور اسرائیل کی مذمت کی۔ اسپیکر بار بار بیٹھنے کا کہتی رہیں لیکن رکن اسمبلی نے اپنی بات جاری رکھی۔

ایوان کی خاتون اسپیکر، یئل بران پیویٹ نے فلسطینی پرچم لہرانے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ پارلیمنٹ میں یہ رویہ ناقابل قبول ہے جس پر اُن کی 2 ہفتے کے لیے رکنیت معطل کی جاتی ہے۔

اسپیکر نے فلسطینی پرچم لہرانے والے رکن اسمبلی کے پارلیمانی الاؤنس کو بطور جرمانہ 2 ماہ کی مدت کے لیے نصف کردیا۔

یاد رہے کہ اسپین، آئرلینڈ اور ناروے نے باضابطہ طور پر فلسطینی ریاست کو تسلیم کرلیا جس کے بعد فرانس میں بھی فلسطین کو تسلیم کرنے کی رائے عامہ ہموار ہوئی ہے۔

فرانسیسی صدر ایمانوئل میکرون نے فروری میں کہا تھا کہ فلسطینی ریاست کو تسلیم کرنا اب ’ممنوع‘ نہیں رہا۔ اب تک اقوام متحدہ کے 193 رکن ممالک میں سے 145 نے فلسطینی ریاست کو تسلیم کرلیا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll