جی این این سوشل

تفریح

اسٹیج کی دنیا کے بے تاج بادشاہ مستانہ کو مداحوں سے بچھڑے 12 برس بیت گئے

معروف مزاحیہ تھیٹر اداکار مستانہ کا اصل نام مرتضیٰ حسن تھا

پر شائع ہوا

کی طرف سے

اسٹیج کی دنیا کے بے تاج بادشاہ مستانہ کو مداحوں سے بچھڑے 12 برس بیت گئے
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

اسٹیج کی دنیا کے بے تاج بادشاہ مستانہ کو مداحوں سے بچھڑے 12 برس بیت گئے، مستانہ نے 4 دہائیوں سے زیادہ عرصہ تک سٹیج اور ٹی وی پر اپنے فن کا لوہا منوایا۔

شہنشاہ جگت ،معروف مزاحیہ تھیٹر اداکار مستانہ کا اصل نام مرتضیٰ حسن تھا، سال 1955ء میں گوجرانوالہ میں پیدا ہونے والے مستانہ نے لڑکپن میں ہی اداکاری کی دنیا میں قدم رکھ دیا اور 4 دہائیوں سے زیادہ عرصہ تک سٹیج اور ٹی وی پر اپنے فن کا جادو جگاتے رہے۔

اس حقیقت سے انکار ممکن نہیں کہ اسٹیج پر اداکاری کرنا بہت مشکل ہے، خاص طور پر مزاحیہ اداکاری تو بہت ہی مشکل ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ اسٹیج فنکار جس قسم کی بھی اداکاری کرتے ہیں اس کا ردعمل فوری طور پر سامنے آجاتا ہے۔

مستانہ نے پنجابی اور اردو دونوں زبانوں کے ڈراموں میں کام کیا، انہیں فی البدیہہ مکالمے کی ادائیگی کا استاد کہا جاتا تھا، مستانہ کے کئی جملے آج بھی سنیں تو ہنسی پر قابو پانا ممکن نہیں رہتا۔

مستانہ نے لاہور میں 2 ہزار سے زائد تھیٹر ڈراموں میں کام کیا جن میں "عاشقو غم نہ کرو"، "چن مکھناں"، "بڑا مزہ آئے گا"،" لاری اڈا"،" کوٹھا" اور" کون جیتا کون ہارا "جیسے ڈرامے قابل ذکر ہیں، مستانہ نے ٹی وی ڈرامہ سیریل "شب دیگ "میں انکل کیوں کا کردار ادا کیا جو بے حد مقبول ہوا۔

مستانہ جگر کے کینسر کے باعث 11 اپریل 2011ء کو بہاولپور میں انتقال کر گئے تھے۔  

پاکستان

پاکستان قازقستان کیساتھ ثقافتی تعلقات بڑھانا چاہتا ہے ،وزیر اطلاعات

وزیر اطلاعات نے کہا کہ پاکستان نے ڈراموں، نغموں اور فلموں میں بڑی ترقی کی جن کی دنیا بھر میں پذیرائی ہوئی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پاکستان قازقستان کیساتھ ثقافتی تعلقات  بڑھانا چاہتا ہے ،وزیر اطلاعات

اسلام آباد : وزیر اطلاعات و نشریات عطا تارڑ  نے قازقستان کے ساتھ پاکستان کے ثقافتی تعلقات کے فروغ کی شدید خواہش کا اظہار کیا ہے۔

آج اسلام آباد میں قازقستان کی فلم خناتے ( گولڈن تھرون ) کی سکریننگ کے حوالے سے ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے دونوں ملکوں کے درمیان ذرائع ابلاغ اور ثقافتی وفود کے بڑے پیمانے پر تبادلے کی اہمیت پر زور دیا۔

وزیر اطلاعات نے کہا کہ پاکستان نے ڈراموں، نغموں اور فلموں میں بڑی ترقی کی جن کی دنیا بھر میں پذیرائی ہوئی۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان نیٹ فلکس کی ایک پاکستانی سیریز بنا رہا ہے جو اٹلی میں تیار کی جا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نجی شعبے کی حوصلہ افزائی کریں گے کہ وہ آگے آئے اور تفریحی صنعت کے فروغ کیلئے اپنا کردار ادا کرے۔

پڑھنا جاری رکھیں

علاقائی

کراچی: سلنڈر دھماکے سے بچوں اور خواتین سمیت 8 افراد جھلس گئے

واقعہ کراچی کے علاقے سولجر بازار نمبر ایک کے قریب ایک گھر میں پیش آیا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

کراچی: سلنڈر دھماکے سے بچوں اور خواتین سمیت 8 افراد جھلس گئے

گھر میں سلنڈر دھماکے سے بچوں اور خواتین سمیت 8 افراد جھلس کر زخمی ہوگئے۔واقعہ کراچی کے علاقے سولجر بازار نمبر ایک کے قریب ایک گھر میں پیش آیا۔

سلنڈر دھماکے کے نتیجے میں ایک ہی خاندان کے 8 افراد زخمی ہوگئے۔زخمیوں میں بچے اور خواتین بھی شامل ہیں۔دھماکے سے عمارت کو بھی نقصان پہنچا۔

زخمیوں میں 45 سالہ محمد موسیٰ ، اس کی اہلیہ 40 سالہ رابعہ موسیٰ ، 10 سالہ نوید موسیٰ ، 8 سالہ رفیق موسیٰ 20 سالہ گلشن موسیٰ ، 15 سالہ روشنی موسیٰ ، 11 سالہ امبرین موسیٰ 12 سالہ نسرین شامل ہیں۔

ریسکیو حکام کے مطابق زخمیوں کو فوری طور پر سول ہسپتال منتقل کیا گیا، جہاں ڈاکٹروں کے مطابق زخمیوں کی حالت خطرے سے باہر ہے، تمام افراد 15 سے 20 فیصد جھلسے ہیں۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ابتدائی طور پر واقعہ حادثہ لگتا ہے، تاہم ہر زاویے کو پیش نظر رکھتے ہوئے تفتیش کی جا رہی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

غزہ معاملے پر عالمی عدالت کے فیصلےکا خیر مقدم کرتے ہیں، ترجمان دفتر خارجہ

پاکستان جنوبی افریقہ کی طرف سے اسرائیل کے خلاف عالمی عدالت انصاف میں دائر کی گئی درخواست کی حمایت کرتا ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

غزہ معاملے پر عالمی عدالت کے فیصلےکا خیر مقدم کرتے ہیں، ترجمان دفتر خارجہ

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ پاکستان غزہ میں اسرائیل کے فوجی آپریشن روکنے کے عالمی عدالت انصاف کے فیصلے کا خیر مقدم کرتا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ ممتاز زہرا بلوچ نے کہا کہ پاکستان جنوبی افریقہ کی طرف سے اسرائیل کے خلاف عالمی عدالت انصاف میں دائر کی گئی درخواست کی حمایت کرتا ہے۔پاکستان عالمی عدالت انصاف کے اقدامات کا خیرمقدم کرتا ہے، جس میں اسرائیل کو رفح میں فوجی کارروائی کو فوری طور پر روکنے کا حکم دیا گیا ہے۔

ممتاز زہرا بلوچ کا کہناتھا کہ اقوام متحدہ نسل کشی کے الزامات کی تحقیقات کرے، پاکستان عالمی عدالت انصاف کے تازہ ترین احکامات کے ساتھ ساتھ 26 جنوری اور 28 مارچ کے سابقہ احکامات پر فوری اور غیر مشروط عمل درآمد کا مطالبہ کرتا ہے۔

ترجمان نے کہا کہ اسرائیلی قابض حکام رفح کراسنگ کو انسانی امداد کی بلا روک ٹوک فراہمی کے لیے کھلا رکھیں ، کسی بھی تحقیقاتی کمیشن، فیکٹ فائنڈنگ مشن یا دیگر تحقیقاتی ادارے کی غزہ پٹی تک بلا رکاوٹ رسائی کو یقینی بنایا جانا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہہم اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ غزہ میں اسرائیل کی جاری وحشیانہ فوجی مہم کو ختم کرنے میں اپنا کردار ادا کرے، ان کارروائیوں پر اسرائیل کو اس کے جرائم کا جوابدہ ٹھہرایا جائے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll