جی این این سوشل

ٹیکنالوجی

گوگل نے آرٹیفیشل انٹیلیجنس پر مبنی ایک معیاری ٹول متعارف کرا دیا

ویو (Veo) ٹول 1080p ریزولوشن کی ایک منٹ تک طویل ویڈیو بنانے کی صلاحیت رکھتا ہے

پر شائع ہوا

کی طرف سے

گوگل نے  آرٹیفیشل انٹیلیجنس پر مبنی ایک معیاری ٹول متعارف کرا دیا
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

گوگل نے اپنے صارفین کی آسانی کے لیے آرٹیفیشل انٹیلیجنس پر مبنی ایک معیاری ٹول متعارف کرا دیا۔

گوگل کی جانب سے لکھ کر ویڈیو تیار کرنے والا (اے آئی) ٹیکنالوجی پر مبنی ویو (Veo) نامی ٹول متعارف کرایا گیا ہے۔

ویو (Veo) ٹول 1080p ریزولوشن کی ایک منٹ تک طویل ویڈیو بنانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

مذکورہ ٹول بہترین اے ٹیکنالوجی سے لیس ہے، اس کی خاص بات یہ ہے کہ ویڈیو کو شروع سے تبدیل کرنے کی ضرورت درپیش نہیں ہوگی بلکہ ویڈیو تیار کرنے کے بعد بھی اس کے مختلف حصوں کی لکھ کر ترمیم کی جاسکے گی۔مگرویو ٹول کے لیے صارفین کو تھوڑا انتظار کرنا ہوگا۔

خیال رہے اس سے قبل اوپن اے آئی کمپنی ’SORA‘ نام کا تحریر سے ویڈیو تیار کرنے والا ٹول متعارف کروایا تھا۔

دنیا

ایرانی صدر کے ہیلی کاپٹر حادثے کی تحقیقاتی رپورٹ جاری

ہیلی کاپٹر کی باقیات سے گولیاں لگنے یا کسی تخریبی کاروائی کے کوئی شواہد نہیں ملے، رپورٹ

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ایرانی صدر کے ہیلی کاپٹر حادثے کی تحقیقاتی رپورٹ جاری

ایرانی صدر ابراہیم رئیسی کے ہیلی کاپٹر حادثے سے متعلق ایران نے تحقیقاتی رپورٹ جاری کردی جس میں کسی قسم کی ’تخریبی کارروائی‘ کے تاثر کو مسترد کیا گیا ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ہیلی کاپٹر میں بلندی سے ٹکرانے کے بعد آگ لگ گئی تاہم اس دعوے کی وجہ نہیں بتائی گئی اور اس رپورٹ کے دعوے کے مطابق یہ بھی واضح نہیں کہ ہیلی کاپٹر بلندی سے کیوں ٹکرایا۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق ہیلی کاپٹر کی باقیات سے گولیاں لگنے یا کسی تخریبی کاروائی کے کوئی شواہد نہیں ملے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ہیلی کاپٹر مقررہ راستے سے نہیں ہٹا اور جس ہیلی کاپٹر کو حادثہ پیش آیا اس کے پائلٹ نے حادثے سے ڈیڑھ منٹ قبل دو دیگر ہیلی کاپٹرز سے رابطہ کیا۔

اس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ واچ ٹاور کی ہیلی کاپٹر کے عملے کے ساتھ گفتگو میں بھی کوئی مشکوک مواد سامنے نہیں آیا۔

رپورٹ کے آخر میں کہا گیا کہ کچھ حصوں اور دستاویزات کا جائزہ لینے کے لیے مزید وقت درکار ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

مارخور کا عالمی دن ہمارے بھرپور قدرتی ورثے کی علامت ہے، وزیر اعظم

وزیر اعظم نے کہا کہ مارخور کے اس عالمی دن پر میں تمام پاکستانیوں اور عالمی برادری سے مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ ماحولیاتی تحفظ کے لیے اپنے عزم کا اعادہ کریں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

مارخور کا عالمی دن ہمارے بھرپور قدرتی ورثے کی علامت ہے، وزیر اعظم

وزیر اعظم پاکستان شہباز شریف نے مارخور کے عالمی دن پر کہا کہ یہ دن ہمارے بھرپور قدرتی ورثے کی علامت ہے۔جمعہ کو پاکستان کے قومی جانور مارخور کے عالمی دن کے موقع پر اپنے خصوصی پیغام میں انہوں نے کہا کہ مارخور اپنے منفرد کارک سکرو کی شکل کے سینگوں کے ساتھ، حیاتیاتی تنوع کے تحفظ اور ماحولیاتی توازن کو برقرار رکھنے کے لئے ہمارے عزم کی نمائندگی کرتا ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ 2 مئی 2024 کو اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اعلان کے مطابق یہ دن منانے کا فیصلہ کیا گیا۔ اس دن کو عالمی سطح پر منانے کا فیصلہ جنگلی حیات کے تحفظ میں ہماری قوم کی کوششوں اور کامیابیوں کا اعتراف ہے۔وزیر اعظم نے کہا کہ گزشتہ ایک دہائی کے دوران مارخور کی آبادی میں نمایاں اضافہ قدرتی ماحول کے تحفظ کے لئے پاکستان کی لگن کا منہ بولتا ثبوت ہے، مارخور کے تحفظ کے پروگراموں میں مقامی کمیونٹیز کے تعاون اور سائنسی تحقیق کا کلیدی کردار ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ پاکستان جنگلی حیوانات اور نباتات کے خطرے سے دوچار انواع میں بین الاقوامی تجارت کے کنونشن کے پرعزم دستخط کنندہ کے طور پر بین الاقوامی تجارت کے کنونشن کیٹگری میں ایک نمایاں درجہ رکھتا ہے،اس حوالے سے کی گئی خصوصی قانون سازی، پاکستان ٹریڈ کنٹرول آف وائلڈ فاؤنا اینڈ فلورا ایکٹ، 2012، ذمہ دارانہ تجارتی طریقوں اور خطرے سے دوچار انواع کی فلاح و بہبود کے لئے ہماری وابستگی کو واضح کرتی ہے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ مارخور کے اس عالمی دن پر میں تمام پاکستانیوں اور عالمی برادری سے مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ ماحولیاتی تحفظ کے لیے اپنے عزم کا اعادہ کریں۔وزیر اعظم نے کہا کہ آئیے نہ صرف مارخور بلکہ ان تمام انواع کے تحفظ کے لئے مل کر کام کریں ۔ 

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

عالمی عدالت انصاف کا اسرائیل کو غزہ میں جاری جارحیت فوری روکنے کا حکم 

حالیہ جاری کردہ فیصلے میں مئوقف اختیار کیا گیا اسرائیلی جارحیت سے فلسطین میں بنیادی  انسانی حقوق کی سخت  پامالی ہوئی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

عالمی عدالت انصاف کا اسرائیل کو غزہ میں جاری جارحیت فوری روکنے کا حکم 

 

عالمی عدالت انصاف نے غزہ میں جاری اسرائیلی جا رحیت کے خلاف فیصلہ سنا دیا۔ 
حالیہ جاری کردہ فیصلے میں مئوقف اختیار کیا گیا اسرائیلی جارحیت سے فلسطین میں بنیادی  انسانی حقوق کی سخت  پامالی ہوئی۔

عدالت  نے بتایا اسرائیل کی حالیہ جاری جا رحیت کے تحت فلسطین میں انسانی زندگیوں کو سنگین خطرات لاحق ہیں۔ 
اسرائیل کی  جارحانہ کارروائیوں کی بدولت رفاہ میں آٹھ لاکھ  سے زائد لوگ بے گھر ہوئے۔ 
اسرائیلی جارحیت پر جاری کردہ فیصلے میں عدالت نے بتایا کہ اسرائیل نے عدالتی حکم کے باوجود شہریوں کے انخلا کے بارے میں عدالت کو مکمل تفصیلات فراہم نہیں کیں۔
اسرائیل نے فلسطینیوں کو خوراک سمیت بنیادی ضروریات کی فراہمی سے محروم رکھا ۔
عدالت  نے اپنا فیصلہ سناتے ہوئے اسرائیل کو جنگ بندی کر کے انسانی امداد کو یقینی بنانے کا حکم جاری کر دیا۔   
عدالتی حکم کے تحت اسرائیل کو ایک ماہ میں انسانی حقوق کی بحالی کے اقدامات پر پیش رفت سے آگاہ کرنے کا پابند کیا گیا۔ 
 عالمی عدالت انصاف نے اسرائیل کو پابند کیا کہ وہ  اقوام متحدہ کی فیکٹ فائنڈنگ ٹیموں کو غزہ کے  تباہ شدہ علاقوں تک کی رسائی فراہم کرے۔ 
عالمی عدالت  نے حکم دیا اسرائیل کو غزہ جانے والے تمام تحقیقاتی کمیشن کے ساتھ تعاون کرنا ہوگا۔ 
مزید برآں عالمی عدالت انصاف نے اسرائیل کو رفاہ بارڈر کراسنگ کو کھولنے کا بھی حکم جاری کر دیا ۔ 
عالمی عدالت انصاف نے  اسرائیلی جا رحیت کے خلاف اپنا حالیہ فیصلہ تیرہ دو کی واضح  اکثریت سے سنایا۔ 
یاد رہے اسرائیل نے انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزی کرتےہوئے غزہ میں سات مئی 2024 کو آپریشن شروع کیا جس پر عالمی عدالت انصاف میں جنوبی افریقہ کی دائر کردہ پٹیشن کے تحت غزہ کے خلاف اسرائیلی جارحیت کے معاملے کو سنا گیا۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll