جی این این سوشل

علاقائی

عید کے موقع پر ضلعی انتظامیہ کے بہترین ، خراج تحسین کے مستحق ہیں، عظمیٰ بخاری

مریم نواز سکیورٹی کے فول پروف انتظامات کے علاوہ صفائی کے انتظامات کی خود نگرانی کر رہی ہیں، وزیراطلاعات پنجاب

پر شائع ہوا

کی طرف سے

عید کے موقع پر ضلعی انتظامیہ کے بہترین ، خراج تحسین کے مستحق ہیں، عظمیٰ بخاری
عید کے موقع پر ضلعی انتظامیہ کے بہترین ، خراج تحسین کے مستحق ہیں، عظمیٰ بخاری

صوبائی وزیر اطلاعات عظمیٰ بخاری نے کہا کہ صوبے بھر کی ضلعی انتظامیہ، ویسٹ مینجمنٹ کا عملہ اور سکیورٹی ادارے خراج تحسین کے مستحق ہیں، پنجاب میں امن و امان کی صورتحال کو برقرار رکھنا اور صفائی کے بہتر انتظامات و سہولیات فراہم کرنے والے اہلکاروں کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔

اپنے بیان میں عظمیٰ بخاری کا کہنا تھا کہ مریم نواز صوبے میں صفائی کے انتظامات کی خود نگرانی کر رہی ہیں۔صوبے بھر کی مساجد اور عید گاہوں میں پولیس کی جانب سے فول پروف سکیورٹی کے انتظامات کئے گئے، ضلعی انتظامیہ اور ان کے افسران کی جانب سے عید کے موقع پر عوام کو بہترین سروسز فراہم کی گئی۔

صوبائی وزیر کا کہنا تھا کہ ویسٹ مینجمنٹ کے عملے نے وزیراعلیٰ مریم نواز کی ہدایات پر سختی سے عملدرآمد کیا ہے، جانوروں کی الائشیں بروقت اٹھائی گئی اور سڑکوں کی دھلائی کی گئی ہے، عید کے تینوں روز ضلعی انتظامیہ اور ویسٹ مینجمنٹ کا عملہ عوام کی خدمت کیلئے موجود رہے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ پنجاب میں پہلی بار بکرا عید پر قربانی کے بعد سڑکوں کو دھویا گیا جو کہ مریم نواز کے بہترین ایڈمنسٹریٹر ہونے کا ثبوت ہے ورنہ ہر بکرا عید پر قربانی کے بعد کئی شہروں میں جگہ جگہ الائشیں نظر آتی تھیں۔

تجارت

پنجاب کے علاقے پوٹھوہار میں گیس اور تیل کی پیداوار شروع

اضافی پیداوار ملک کی توانائی کی طلب کو پورا کرنے میں مدد دے گی اور زرمبادلہ کی بھی بچت ہوگی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پنجاب کے علاقے پوٹھوہار میں گیس اور تیل کی پیداوار شروع

پی پی ایل نے پوٹھوہار میں نئے کنویں سے ہائیڈرو کاربن کی پیداوار شروع کر دی ہے۔

پاکستان پیٹرولیم لمیٹڈ (پی پی ایل) نے پنجاب کے علاقے پوٹھوہارمیں واقع ایک نئے کنویں آدھی ساؤتھ 8 سے ہائیڈرو کاربن کی پیداوار شروع کر دی ہے۔ یہ کنواں 3460 میٹر کی گہرائی تک کھودا گیا ہے اور اس سے 550 بیرل یومیہ (بی پی ڈی) تیل اور 0.8 ملین معیاری کیوبک فٹ یومیہ (ایم ایم سی ایف ڈی) گیس پیدا ہو رہی ہے۔

رپورٹ کے مطابق یہ اضافی پیداوار ملک کی توانائی کی طلب کو پورا کرنے میں مدد دے گی اور زرمبادلہ کی بھی بچت ہوگی۔ پی پی ایل کے جوائنٹ وینچر پارٹنرز میں آئل اینڈ گیس ڈیولپمنٹ کمپنی لمیٹڈ (او جی ڈی سی ایل) اور پاکستان آئل فیلڈ لمیٹڈ (پی او ایل) شامل ہیں۔

ادھی مائننگ لیز میں یہ تیسرا کنواں ہے جس سے ہائیڈرو کاربن کی پیداوار شروع ہوئی ہے۔ پچھلے سال پی پی ایل نے آدھی ساؤتھ 6 کنویں سے پیداوار شروع کی تھی، اور رواں ماہ کے اوائل میں سندھ کے ضلع خیرپور میں واقع لطیف بلاک میں دریافت ہونے والے کنویں ٹور ون سے گیس کی دریافت کا اعلان کیا تھا۔

پی پی ایل ملک کی ایک سرکاری تیل و گیس کی تلاش کرنے والی کمپنی ہے جو ملک بھر میں تیل اور گیس کی تلاش اور پیداوار کا کام کرتی ہے۔ کمپنی کا مقصد ملک کی توانائی کی سلامتی کو یقینی بنانا اور معیشت میں حصہ ڈالنا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

موسم

ملک کے مختلف علاقوں میں تیز بارش کا امکان

اسلام آباد اور گرد و نواح میں موسم گرم اور مرطوب رہنے کے علاوہ رات کو تیز ہواؤں اور گرج چمک کے ساتھ بارش ہونے کی توقع ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ملک کے مختلف علاقوں میں تیز بارش کا امکان

لاہور: محکمہ موسمیات نے ملک کے مختلف علاقوں میں تیز بارش ہونے کا امکان ظاہر کیا ہے۔

محکمہ موسمیات کے مطابق اگلے 24 گھنٹوں کے دوران خیبر پختونخوا، وسطی/جنوبی پنجاب، سندھ اور شمال مشرقی/جنوبی بلوچستان میں کہیں کہیں تیز بارش ہونے کا امکان ہے۔ اس کے علاوہ شمال مشرقی پنجاب، خطہ پوٹھوہار، اسلام آباد، کشمیر اور گلگت بلتستان میں چند مقامات پر تیز ہوائیں چلنے اور گرج چمک کے ساتھ بارش ہو سکتی ہے۔

اسلام آباد اور گرد و نواح میں موسم گرم اور مرطوب رہنے کے علاوہ رات کو تیز ہواؤں اور گرج چمک کے ساتھ بارش ہونے کی توقع ہے۔

مری، گلیات، اٹک، چکوال، تلہ گنگ، جہلم، منڈی بہاؤ الدین، گجرات، گوجرانوالہ، سیالکوٹ، نارووال، لاہور، شیخوپورہ، جھنگ، ٹوبہ ٹیک سنگھ، ننکانہ صاحب، فیصل آباد، پاکپتن، قصور، خوشاب، سرگودھا، لیہ، بھکر، میانوالی، بہاولپور، بہاولنگر، ڈیرہ غازی خان، راجن پور، ملتان، رحیم یار خان، خانیوال، مظفر گڑھ اور کوٹ ادو:** چند مقامات پر تیز ہوائیں چلنے اور گرج چمک کے ساتھ بارش ہونے کا امکان ہے۔ اس دوران جنوبی اضلاع میں چند مقامات پر موسلادھار بارش کی بھی توقع ہے۔

صوبہ خیبر پختونخواکے علاقے  دیر، چترال، سوات، کوہستان، مالاکنڈ، باجوڑ، شانگلہ، بٹگرام، بونیر، کوہاٹ، باجوڑ، مہمند، خیبر، مانسہرہ، ایبٹ آباد، ہری پور، پشاور، صوابی، مردان، چارسدہ، ہنگو، کرم، کرک، وزیرستان، بنوں، لکی مروت اور ڈیرہ اسماعیل خان میں چند مقامات پر تیز ہوائیں چلنے اور گرج چمک کے ساتھ بارش کا امکان ہے۔

 لسبیلہ، خضدار، آوران، ژوب، بارکھان، موسیٰ خیل، شیرانی، کوہلو، ہرنائی، سبی، لورالائی، نصیر آباد، جھل مگسی، جعفر آباد، کوئٹہ، زیارت، قلات، خضدار، لسبیلہ، آواران اور کیچ میں تیز ہوائیں چلنے اور گرج چمک کے ساتھ بارش جبکہ چند مقامات پر تیز بارش ہونے کا بھی امکان ہے۔

سکھر، کشمور، خیر پور، لاڑکانہ، دادو، بدین، ٹھٹھہ، سجاول، کراچی، جیکب آباد، شکار پور، شہید بینظیر آباد، حیدرآباد، تھرپارکر، عمرکوٹ، مٹھی، میرپور خاص اور سانگھڑ میں چند مقامات پر تیز ہواؤں اور گرج چمک کے ساتھ بارش کی توقع ہے۔ اس دوران بعض مقامات پر موسلادھار بارش کا بھی امکان ظاہر کیا گیا ہے۔

کشمیر اور گلگت بلتستان میں  مطلع جزوی ابرآلود رہنے کے علاوہ تیز ہواؤں اور گرج چمک کے ساتھ چند مقامات پر بارش ہونے کی پیشگوئی کی گئی ہے۔

محکمہ موسمیات نے عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ تیز بارش اور طوفان سے بچاؤ کے لیے احتیاطی تدابیر اختیار کریں۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

بنگلہ دیش میں کرفیو نافذ، فوج طلب کر لی گئی، مظاہروں میں 105 ہلاک

حکومت کے کرفیو نافذ کرنے اور فوج طلب کرنے کے اقدامات کے باوجود، بنگلہ دیش میں حالات اب بھی کشیدہ ہیں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

بنگلہ دیش میں کرفیو نافذ، فوج طلب کر لی گئی، مظاہروں میں 105 ہلاک

ڈھاکہ: بنگلہ دیش میں سرکاری ملازمتوں میں کوٹہ سسٹم کے خلاف طلبہ کے مظاہروں کے شدت اختیار کرنے کے بعد حکومت نے ملک بھر میں کرفیو نافذ کر دیا ہے اور فوج طلب کر لی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق بنگلہ دیش کی حکومت نے احتجاج سے نمٹنے کے لیے ملک بھر میں کرفیو نافذ کرکے فوج کو طلب کر لیا ہے۔

حکومت کے ترجمان نعیم الاسلام خان نے کہا کہ حکومت نے کرفیو نافذ کرنے اور سویلین حکام کی مدد کے لیے فوج کو تعینات کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ کرفیو فوری طور پر نافذ العمل ہوگا۔

رواں ہفتے بنگلہ دیش میں طلبہ مظاہرین اور پولیس کے درمیان ہونے والی جھڑپوں میں کم از کم 105 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔ یہ مظاہرے 15 سال اقتدار میں رہنے کے بعد وزیر اعظم شیخ حسینہ واجد کی حکومت کے لیے ایک اہم چیلنج ہیں۔

اس سے قبل دارالحکومت ڈھاکا میں پولیس نے مزید تشدد کو روکنے کی کوشش میں ایک دن کے لیے تمام عوامی اجتماعات پر پابندی عائد کرنے کا سخت قدم اٹھایا تھا۔

بنگلہ دیش میں سرکاری ملازمتوں میں کوٹہ سسٹم کے خلاف طلبہ کا احتجاج جاری ہے۔ اس نظام کے تحت، 1971 کی جنگ میں پاکستانی فوج کے خلاف لڑنے والے بنگلہ دیشیوں کے بچوں اور خاندانوں کے لیے سرکاری ملازمتوں میں کچھ حصے مختص ہیں۔ تاہم مظاہرین کا کہنا ہے کہ اس نظام سے میرٹ پر مبنی بھرتی کا عمل متاثر ہوتا ہے اور اس سے دیگر امیدواروں کے مواقع کم ہو جاتے ہیں۔

حکومت کے کرفیو نافذ کرنے اور فوج طلب کرنے کے اقدامات کے باوجود، بنگلہ دیش میں حالات اب بھی کشیدہ ہیں۔ کئی شہروں میں مظاہرے جاری ہیں اور پولیس اور مظاہرین کے درمیان جھڑپوں کے واقعات بھی سامنے آ رہے ہیں۔

اقوام متحدہ اور دیگر بین الاقوامی تنظیموں نے بنگلہ دیش میں تشدد کے واقعات پر تشویش کا اظہار کیا ہے اور حکومت سے مظاہرین کے ساتھ پرامن طریقے سے بات چیت کرنے کی اپیل کی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll