جی این این سوشل

پاکستان

اولمپکس کا میدان اور پاکستان

پر شائع ہوا

جاپان کے شہر ٹوکیو میں 2020اولمپکس یعنی دنیا کے سب سے بڑے کھیلوں کے مقابلے منعقد ہوئے جس میں حسب توقع،امریکہ،چین اور جاپان نے پہلی تین پوزیشنیں حاصل کیں۔سونے کے تمغوں اور مجموعی تمغوں کی دوڑ میں امریکہ سو سے زائد میڈل جیت کر سب سے اوپر ہے۔

سید محمود شیرازی Profile سید محمود شیرازی

 پاکستان کا بھی دس رکنی دستہ ان کھیلوں میں شریک ہوا جن میں صرف ارشد ندیم اپنی کارکردگی کی بنا پر براہ راست اولمپک مقابلوں میں شریک ہوئے باقی سب کھلاڑی وائلڈ کارڈ انٹری اور پاکستان اولمپک کمیٹی کی سفارش پر گئے۔ اولمپک میڈل ٹیبل پر نظر دوڑائیں تو ٹاپ ٹین وہ ہی ممالک ہیں جو اس وقت معاشی اور سیاسی لحاظ سے دنیا کو کنٹرول کر رہے ہیں وہی مماک کھیلوں میں بھی چھائے ہوئے ہیں۔ سلامتی کونسل کے پانچ مستقل اراکین ہیں جو اپنی مرضی کے قوانین سلامتی کونسل سے پاس کرواتے ہیں اور کوئی قرار داد کوجب چاہے ویٹو کر سکتے ہیں جن میں امریکہ، چین، روس، برطانیہ اور فرانس شامل ہیں جبکہ اولمپک ٹیبل کے ٹاپ ٹین ممالک میں بھی یہی ممالک شامل ہیں۔

 دنیا میں سب سے طاقتور ترین معاشی گروپ جی سیون ممالک ہیں جن میں امریکہ، کینیڈا، فرانس،جرمنی، اٹلی،برطانیہ اور جاپان شامل ہیں۔ ان میں سے چھ ممالک اولمپکس میڈل پر ٹاپ ٹین میں ہیں جبکہ کینیڈا بھی سات سونے کے تمغوں کے ساتھ مجموعی طور پر 24تمغے جیت کر 11ویں نمبر پر ہے۔ جس طرح جی سیون ممالک دنیا کی آبادی کا دس فیصد ہیں اور پوری دنیا کے جی ڈی پی کا چالیس فیصد حصہ ان کے پاس ہے اس طرح اولمپکس ٹیبل پر بھی ان کی حکمرانی ہیں ان تمام ساتوں ممالک کے تمغے باقی ممالک کے مجموعی تمغوں سے زیادہ ہیں۔ اس طرح دنیا کا کوئی بھی بڑا گروپ یا ممالک کی تنظیم اٹھا کہ دیکھ لیں چاہے وہ جی ٹوینٹی ہو ہو یا جی سیون یا نیٹو کا اتحاد ہو یا اقوام متحدہ کے سلامتی کونسل کے مستقل اراکین جو ممالک ہمیں وہاں قائدانہ کردار ادا کرتے نظر آ رہے ہیں وہی ممالک اولمپکس مقابلوں میں میڈل حاصل کرنے کی دوڑ میں بھی آگے ہیں اور باقی سب ان کی تقلید کر رہے ہیں۔ اگر ہم مسلم ممالک کی کارکردگی کا جائزہ لیں تو اسلامی ممالک میں سے ترکی ہی کی کارکردگی اولمپکس میں کسی حد تک قابل ذکر ہے ترکی دو سونے کے تمغوں کے ساتھ تیرہ میڈل حاصل کر کے مجموعی تمغوں کی دوڑ میں 35ویں نمبر پر آیا ہے۔

 ہمسائیہ ملک ایران نے بھی  تین سونے کے تمغوں جیت کر21ویں پوزیشن حاصل کی ہے اور جنگ زدہ ملک شام بھی ایک کانسی کا تمغہ جیت کر فہرست میں سب سے آخر میں موجود ہے۔ یعنی کھیلوں میں بھی وہی ممالک آگے ہیں جو دنیا بھر میں معیشت اور سیاست اور طاقت میں سب سے آگے ہیں۔امریکہ اگر کو سپر پاور کا درجہ حاصل ہے تو چین ابھرتی ہوئی معاشی سپر پاور ہے اور دونوں ممالک تمغوں میں بھی پہلی اور دوسری پوزیشن پر موجود ہیں۔ برطانیہ، روس، فرانس، اٹلی، جاپان،،آسٹریلیا، جرمنی اور ہالینڈ وہ ممالک ہیں جو دنیا میں خوشحال تصور کئے جاتے ہیں جہاں جانے کیلئے پاکستانی لوگ ڈنکی لگانے سے بھی گریز نہیں کرتے۔اولمپک کا میڈل ٹیبل بھی ان کی برتری کی کہانی سنا رہا ہے۔ اس کا یہ مطلب نہیں ہے کہ یہ ممالک اگر معیشت اور سیاست میں آگے ہیں تو ان کی برتری تسلیم کر لی جائے او رہماری فیڈریشن بس ہاتھ پر ہاتھ دھری بیٹھی رہیں (ویسے جو حال پچھلے بیس سالوں میں کھیلوں کا ہوا ہے لگتا ہے یہ ہاتھ پر ہاتھ دھرے بیٹھے نہیں بلکہ تکیہ لگائے سو رہے ہیں)۔

 ہاکی کا کھیل جس میں پاکستان نے سب سے زیادہ میڈل حاصل کئے ہیں بد قسمتی سے پچھلے دو اولمپکس مقابلوں میں پاکستان کی ہاکی ٹیم کوالیفائی ہی نہیں کر سکی۔ اسی طرح ایسے کھیل جو انفرادی توجہ کے طالب ہیں جن میں پاکستان اگر تھوڑی سی زیادہ محنت کرے تو تمغے جیت سکتا ہے جیسے ویٹ لفٹنگ، کشتی، باکسنگ، جویلین تھر اور ہیمر تھرو ایسے کھیل ہیں جو زیادہ تر اتھلیٹ اپنے بل بوتے پر ہی کھیل رہے ہیں اور انہیں فیڈریشن کی حمایت اور مدد نہ حاصل ہونے کے برابر ہے۔

ٹوکیو اولمپکس سے یہ بات بھی واضح ہوئی کہ انفرادی کھیلوں پر توجہ دی جائے تو ہمارے کھلاڑی اچھا پرفارم کر سکتے ہیں۔بھارت کے نیرج چوپڑا کو عالمی معیار کی سہولتیں میسر تھیں اور ان کیلئے غیر ملکی کوچ اور کڑوڑوں کے فنڈز مہیا کئے گئے اور انہوں نے اپنی قوم کو مایوس نہیں کیا جبکہ ان کے مقابلے میں ارشد ندیم گاؤں کی کچی پکی زمین پر کھیلتے ہوئے دنیا کے سب سے بڑے مقابلوں میں پہنچے اور قابل ذکر کارکردگی دکھائی جس پر وہ داد کے مستحق ہیں۔ اور جو کھلاڑی سفارشی کوٹے پر گئے وہ اپنی ہیٹس میں آخری نمبر پر آئے جس سے ظاہرہوتا ہے کہ ہمارے ہاں اولمپکس سلیکشن کا معیارکس حد تک گر چکا ہے۔بیس سال سے ایک ہی شخص فیڈریشن کو سنبھال رہا ہے اگر نتائج برآمد نہیں ہو رہے تو انہیں سائیڈ لائن کرنے میں کیا امر مانع ہے یا وہ خود تھوڑی شرم و حیا کریں اور فیڈریشن کا پیچھا چھوڑ دیں۔ نیرج چوپڑا اگر تمغہ جیت سکتا ہے تو پاکستانی کھلاڑی بھی یہ کر سکتے ہیں صرف انہیں معاشی طور پر آزادی اور سہولتیں مہیا کرنا ہوں گی۔ ٹیم گیمز کی بجائے اگر انفرادی کھیلوں اور کھلاڑیوں پر پیسہ لگایا جائے تو اگلے اولمپکس میں پاکستان کا نام بھی میڈل ٹیبل پر آ سکتا ہے۔ پاکستانی قوم تو صرف یہ چاہتی ہے چلو جب اولمپکس مقابلے ہوں تو مسلم ممالک اور ایشیا میں ہی پاکستان اپنی کارکردگی بہتر کر لے نہ میڈل کے ڈھیر لگائے صرف دو چار میڈل ہی جیت لے تا کہ میڈل لسٹ میں ہم پاکستان کا نام دیکھ کر ہی خوش ہو جائیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

صحت

کورونا وباء:  سندھ حکومت کا ڈاکٹروں اور   طبی  عملے کو بوسٹر ڈوز لگانے کا فیصلہ

سندھ بھر میں تمام ڈاکٹرز اور ہیلتھ ورکرز کو بوسٹر ڈوز لگائی جائے گی۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

تفصیلات کے مطابق   محکمہ صحت سندھ نے تمام ڈاکٹروں طبی اور نیم طبی عملے کو بوسٹر ڈوز لگانے کا فیصلہ  کرلیا ہے۔ محکمہ صحت نے وفاقی حکومت اور نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر( این سی او سی)  کو آگاہ کردیاہے۔

کرونا وائرس کے اس لہر میں ڈاکٹرز طبی عملے میں بھی متاثر ہورہا ہے، اسپتالوں میں کرونا مریضوں کی مسلسل آمد پر یہ فیصلہ کیا گیا ، سندھ بھر میں تمام ڈاکٹرز اور ہیلتھ ورکرز کو بوسٹر ڈوز لگائی جائے گی۔

پاکستان میں عالمی وبا کورونا وائرس سے گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید 66 افراد جاں بحق ہوگئے جبکہ مجموعی اموات کی تعداد 27 ہزار4 ہو گئی۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کی جانب سے جاری تازہ اعدادو شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں مزید 3ہزار12 کورونا کیسز رپورٹ ہوئے۔ ملک میں کورونا کیسز کی مجموعی تعداد 12 لاکھ15 ہزار821ہوگئی۔

این سی او سی کے مطابق ایک ملک بھر میں 56 ہزار 778 کورونا ٹیسٹ کیے گئے اور مثبت کیسز کی شرح 5.30 فیصد رہی۔

سندھ میں کورونا کے کیسز کی تعداد 4 لاکھ 47 ہزار 678، خیبر پختونخوا میں ایک لاکھ 69 ہزار 972، پنجاب میں 4 لاکھ 18 ہزار196، اسلام آباد میں ایک لاکھ 3 ہزار549، بلوچستان میں 32 ہزار671، آزاد کشمیر میں 33 ہزار 551 اور گلگت بلتستان میں 10 ہزار 204 ہو گئی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے بجلی کی قیمتوں میں اضافہ مستردکردیا

شہباز شریف نے کہا ہے کہ ظلم کی حکومت کو جانا ہوگا۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

تفصیلات کے مطابق  پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے بجلی کی قیمتوں میں اضافہ مسترد کر دیا ہے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک ٹویٹ میں شہباز شریف نے کہا کہ  صدارتی آرڈیننس کے ذریعے بجلی بلوں میں 5 سے 35 فیصد ایڈوانس ٹیکس کا نفاذ حکومت کی عوام کے خلاف معاشی دہشت گردی ہے ، اس ظلم کو سختی سے مسترد کرتے ہیں۔ ظالم اور نالائق حکومت ملک میں خانہ جنگی کرانے پر تلی ہے۔

اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے کہا کہ  ظلم کی حکومت کو جانا ہوگا ،  بدترین مہنگائی، پٹرول میں اضافے کے بعد بجلی کی قیمت بڑھانے کا ایک اور بم عوام پر پھینکا گیا ہے ، بے رحمی سے عوام کا معاشی قتل کیا جارہاہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

مسلم لیگ ن میں بیانیے کی جنگ شدت اختیار کر گئی، ذرائع

اپوزیشن لیڈر شہباز شریف اور حمزہ شہباز مسلسل 2 پارٹی اجلاسوں سے غائب ہیں ۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

پارٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ  پاکستان مسلم لیگ ن میں بیانئے کی جنگ شدت اختیار کر گئی ہے، مسلم لیگ ن کے صدر  شہباز شریف اور پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حمزہ شہباز کی پارٹی کے تنظیمی معاملات سے عدم دلچسپی،مفاہمتی اور مزاحمتی بیانیے کے باعث ڈویژنل عہدیداران بھی کنفیوژن کا شکار ہوگئے۔

مزید پڑھیں : سندھ حکومت کا ڈاکٹروں اور طبی عملے کو بوسٹر ڈوز لگانے کا فیصلہ

ذرائع  کے مطابق  مسلم لیگ ن پنجاب کے ڈویژنل اجلاسوں میں شہباز شریف اور حمزہ شہباز کی ماڈل ٹاون لاہور میں موجود ہونے کے باوجود شرکت نہیں کر رہے، پارٹی کی تنظیم نو کے معاملات پارٹی صدر شہباز شریف کی بجائے نائب صدر مریم نواز کے کندھوں پر ہیں ، مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف لندن سے ویڈیو لنک کے ذریعے پارٹی معاملات میں باقاعدہ طور پر متحرک ہیں ۔

ذرائع  کا کہنا ہے کہ  شہباز شریف اور حمزہ شہباز مسلسل 2 پارٹی اجلاسوں سے غائب ہیں ،جس کی وجہ سے  مقامی ڈویژنل لیگی رہنماوں میں تشویش کی لہر ہے، اجلاسوں کے شرکا ایک دوسرے سے پارٹی صدر شہباز شریف کی عدم شرکت کی وجوہات پوچھتے رہے،اجلاس میں شریک مزاحمتی بیانئے کے حامی رہنماوں نے اس معاملے پر چپ سادھ لی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

Trending

Take a poll